پنجاب میں بچو ں کو 10برس تک پولیوسے بچاؤ کے قطرے پلائے جائیں گے

EjazNews

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی زیر صدارت انسداد پولیو سے متعلق اہم اجلاس ہوا۔یہ اجلاس لاہور میں پولیو کا کیس سامنے آنے کے بعد ہوا ۔ اجلاس میں وزیراعلیٰ کو بتایا گیا کہ مہم کے دوران پولیو کے قطرے بچوں کو پلائے گئے تھے لیکن بچے کو انسداد پولیو کی زیرو ڈوز نہیں دی گئی ۔
بریفنگ کے بعد وزیراعلیٰ نے پولیو کیس کو انتہائی تشویشناک قرار دیتے ہوئے فیصلہ کیا ہے کہ بچوں کو 10برس تک پولیو کے قطرے پلائے جائیں جبکہ متعلقہ محکمو ں اور اداروں کو انسداد پولیو کے لیے مربوط اقدامات کرنے کی ہدایات بھی جاری کیں۔
وزیراعلیٰ نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے محکمہ صحت کوحکم دیا کہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ کوئی بچہ انسداد پولیو ویکسینیشن سے محروم نہ رہے۔ان کا کہنا تھ کہ صرف اجلاس کر کے باتوں سے کام نہیں چلے گا بلکہ لاہور کے داخلی و خارجی راستوں، بس اڈو، اسٹیشنز پر ویکسینیشن کے بھی خصوصی اقدامات کیے جائیں۔
پنجاب میں کل سے پولیو مہم مزید تیز کر دی جائے گی اور وزیر اعلیٰ خود بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلا کر اس مہم کا آغاز کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں:  جو ماں اپنے بیٹے کو وطن پر قربان کرنے کیلئے بھیج دے، کیا اس کے شوہر کی شہریت پر کوئی شک ہو سکتا ہے؟:چیف جسٹس اطہرمن اللہ

دوسری جانب سندھ میں پولیو وائرس کی موجودگی کے سبب سندھ حکومت کراچی میں 2ہزار پولیو مراکز قائم کرے گی۔ حکومت سندھ نے والدین سے بھی اپیل کی ہے کہ وہ اپنے بچوں کو ان سینٹر میں لا کر پولیو ویکسین پلوائیں۔ یاد رہے کراچی میں سیوریج کے پانی میں وائرس کی موجودگی کے بعد یہ مہم چلائی جارہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں