Narendar modi

بھارتی سپریم کورٹ ان ایکشن ،اقلیتوں کے تحفظ کیلئے اٹھائے گئے اقداما ت کی رپورٹ مانگ لی

EjazNews

بھارتی میڈیا میں چلنے والی خبروں کے مطابق انڈیا کے سپریم کورٹ نے مودی حکومت سمیت انڈیا کی10 ریاستوں کو نوٹس جاری کیے ہیں جن میں حکومتوں سے ہجوم کے ہاتھوں شہریوں کی ہلاکتوں کے واقعات کی روک تھام کے لیے اٹھائے گئے اقدامات سے متعلق وضاحت طلب کی گئی ہے۔سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کی سربراہی میں سماعت کرنے والے بینچ نے قومی کمیشن برائے انسانی حقوق کو بھی نوٹس جاری کیا ہے جن ریاستوں کو نوٹس بھیجے گئے ہیں ان میں اتر پردیش، آندھرا پردیش، دلی اور راجستھان کی حکومتوں سے بھی جواب مانگے گئے ہیں۔سپریم کورٹ نے یہ نوٹس شوبز سمیت مختلف شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والی شخصیات کی جانب سے وزیراعظم مودی کو لکھے گئے کھلے خط کے بعد لیا۔کھلے خط میں مسلمانوں سمیت دلت اور دیگر اقلیتوں کا قتل عام روکنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔مودی کے نام لکھے گئے خط میں قتل کے واقعات کو ایک مخصوص طبقے پر ظلم اور غلط بیانیہ قرار دیا گیا ہے۔
واضح رہے گزشتہ دنوں ایک مسلمان تبریز انصاری کو درخت کے ساتھ باندھ کر دن رات مارا جاتا رہا اور کہیں پر قانون نافذ کرنے والے کسی ادارے نے اس ظلم کو روکنے کی کوشش نہیں کی۔ بعد ازاں اس ظلم کو برداشت نہ کرتے ہوئے تبریز انصاری اس دنیا فانی سے کوچ کر گیا۔ تبریز انصاری کے اس بیہمانہ قتل نے پورے ہندوستان کے مسلمانوں کو سوچنے پر مجبور کر دیا ہے کہ وہ کس قدر غیر محفوظ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  ڈونلڈ ٹرمپ کا پہلی مرتبہ طالبان سے ٹیلی فونک رابطہ، امن کی طرف پیشرفت

اپنا تبصرہ بھیجیں