muhammad amir

دنیائے کرکٹ کے دو بڑے فاسٹ باؤلرز ریٹائرڈ

EjazNews

فاسٹ بائولر محمد عامر نے جولائی 2009 میں سری لنکا کے خلاف میچ سے اپنے ٹیسٹ کیرئیر کا آغاز کیا تھا، انہوں نے 36 ٹیسٹ میچز میں 119وکٹیں حاصل کیں۔انہوں نے اپریل 2017 میں کنگسٹن میں ویسٹ انڈیز کے خلاف 44 رنز کے عوض 6 وکٹیں حاصل کرکے بہترین پرفارمنس دکھائی تھی۔ 27سالہ محمد عامر کے کرکٹ کیرئیر کے پانچ بہترین سال پابندی کی نظر ہو گئے جس سے پاکستان کرکٹ ٹیم کو بھی بہت نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔ محمد عامر نے پابندی ختم ہونے کے بعد22ٹیسٹ میچز کھیلے تاہم پابندی سے قبل انہوں نے14ٹیسٹ میچز کھیلے تھے۔ تاہم اس بہترین فاسٹ بائولر نے ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کر دیا ہے۔
محمد عامر نے کہا کہ کرکٹ کے روایتی فارمیٹ میں قومی ٹیم کی نمائندگی کرنا میرے لیے اعزاز تھا۔میں نے ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا فیصلہ کیا ہے تاکہ ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی کرکٹ پر توجہ مرکوز کرسکوں۔میرا اصل مقصد قومی ٹیم کی نمائندگی کرنا ہے اور مستقبل میں مختلف میچز اور آئندہ برس آئی سی سی ٹی 20 ورلڈ کپ میں اپنا بہترین کردار ادا کرنے کی کوشش کروں گا۔وہ کچھ عرصے سے ریٹائرمنٹ سے متعلق سوچ رہے تھے لیکن ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا فیصلہ آسان نہیں تھا۔
ان کا کہنا تھا آئی سی سی ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ قریب ہے اور پاکستان میں بہترین نوجوان فاسٹ باؤلرز موجود ہیں اس لیے بہتر ہے کہ میں ریٹائر ہوجاؤں تاکہ سلیکٹرز انہیں قومی ٹیم میں جگہ دے سکیں۔ٹیسٹ کرکٹ میں اپنی ٹیم کے تمام ساتھی کھلاڑیوں اور مخالفین کا بھی شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ان کے ساتھ ٹیسٹ کرکٹ کھیلنا ایک اعزاز تھا۔فاسٹ باؤلر محمد عامر نے مزید کہا کہ میں امید کرتا ہوں کہ ہم اسی عزم اور حوصلے کے ساتھ محدود دورانیے کی کرکٹ بھی کھیلتے رہیں گے۔مجھے اپنے سینے پر گولڈن اسٹار لوگو لگانے کا موقع فراہم کرنے پر پاکستان کرکٹ بورڈ کا مشکور ہوں۔ میں اپنے تمام کوچز کا بھی شکر گزار ہوں جنہوں نے میرے کیرئیر کے مختلف مراحل میں رہنمائی کی۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستان میں جو لوگ ترقی سے پیچھے رہ گئے ہیں ان کو اوپر لے کر آنا ہے:وزیراعظم
لیستھ ملیگا

دوسری جانب سری لنکن کے فاسٹ بائولر لیستھ ملینگا نے بھی ون ڈے میچ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کر دیا ہے۔ 225میچ کھیلنے والے میلنگا کو سری لنکا کی جانب سے سب سے زیادہ 335وکٹ حاصل کرنے کا اعزاز حاصل ہے۔35سالہ ملینگا کی کارکردگی ورلڈ کپ 2019ءمیں بھی اچھی رہی تھی۔ سری لنکا کے کپتان نے بھی اس بات کا اعتراف کیا تھا کہ ملینگا کی ریٹائرمن ٹٹیم کیلئے بہت بڑا مسئلہ کیونکہ وہ نہ صرف اچھے بائولر ہیں بلکہ اس کے ساتھ اچھی کارکردگی بھی دکھاتے ہیں۔
ملینگا بھی عامر کی طرح ٹی ٹونٹی کرکٹ کھیلتے رہیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں