bilwal bhato zardari

ہمارا چیئرمین سینٹ بن جائے گا:بلاول بھٹو زرداری

EjazNews

بلاول بھٹو زرداری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں سمجھتا ہوں سی پیک منصوبہ امریکہ کی وجہ سے نہیں، عمران خان کی کم نظری کی وجہ سے متاثر ہو سکتا ہے۔میں عمران خان سے کہتا ہوں کہ عوام دشمن بجٹ واپس لے اور عوام دوست بجٹ پیش کرے ،پاکستان پیپلز پارٹی انکا ساتھ دیں گی۔ لیکن اگر آپ عوام کے معاشی حقوق، انسانی حقوق پر حملے کروگے تو پھر ہم آپ سے جنگ کریں گے۔کسی بھی قیمت پر ہم سی پیک پر کمپرومائز نہیں کرنے دیں گیں۔
ان کا کہنا تھا وزیر اعظم کو چاہیے تھا کہ وہ باہر سچ بولتے، بار بار جھوٹ بولنے سے دنیا میں یہ پیغام جائیگا کہ ہمارا وزیر اعظم جھوٹا ہے۔ہم نہیں چاہتے کہ ہمارا کوئی بھی ادارہ متنازع ہو۔ حکومت کو میری تجویز ہے کہ ہمیں ملکی مفاد میں ملکر کام کرنا ہو گا۔ وزیر اعظم امریکہ میں ہیں، اگر وہ وہاں ملک کے وزیر اعظم کی حیثیت سے خطاب کرتے تو ہم انکی حمایت کرتے۔
ا ن کا کہنا تھا 25جولائی کو اپوزیشن سے مل کر یوم سیا منا رہی ہیں۔ کل پورے پاکستان سے نعرہ اٹھے گا، نا منظور نا منظور سیلیکٹ حکومت نا منظور۔ان کا کہنا تھا سینیٹ میں حکومت کے لوگ ہمیں ووٹ دیں گے۔
بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ گھوٹکی کے عوام کا شکر گزار ہوں کہ اُنہوں نے بہادری کے ساتھ مقابلہ کیا۔این اے 205 کے نتائج پاکستانی عوام کی کامیابی اور سلیکٹڈ گورنمنٹ کے منہ پر طمانچہ ہیں۔ پاکستان پیپلزپارٹی کے جیالے بھی بہترین انتخابی مہم چلانے پر مبارک باد کے مستحق ہیں۔ان کا کہنا تھا مولانا فضل الرحمان اور مسلم لیگ ن کی سردار محمد بخش مہر کی حمایت پر ان کا شکرگزار ہوں۔گھوٹکی میں پی پی امیدوار سردار محمد بخش مہر کی فتح نے سلیکٹڈ حکومت کی عوامی مقبولیت کا پول کھول دیاپاکستان پیپلزپارٹی کی نوجوان قیادت کا مسلسل اسمبلیوں تک پہنچنا ایک نئی صبح کا پیغام ہے۔
ان کا کہنا تھا حکومت کی جانب سے اپوزیشن میں دراڑیں ڈالنے کی کوششیں ناکام ہوں گی۔اپوزیشن پارلیمنٹ کے اندر اور باہر یکجا اور اے پی سی کے فیصلوں کی پابند ہے۔پوری اپوزیشن کو قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف پر اعتماد ہے۔گھوٹکی کے ضمنی انتخاب کی طرح چیئرمن سینیٹ کے معاملے میں بھی حکومت کو شکست ہوگی۔ہر محاذ پر ناکامی حکومت کی تقدیر بن چکی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  ایٹمی ہتھیاروں کا تحفظ ، درجہ بندی میں پاکستان کا 33واں نمبر

اپنا تبصرہ بھیجیں