pak-football

ویمن فٹبال کی ٹیم 8روزہ دورے پر ترکی روانہ، پاکستان فٹ بال پر نزع کی سی کیفیت طاری ہے

EjazNews

ویمن فٹبال ٹیم 8روزہ دورے پر ترکی روانہ ہوئی ہے جس کا مقصد ویمن امپاور منٹ اور ملک میں خواتین فٹبال کو فروغ دینا ہے ۔ یہ ٹیم ترکی کے شہروں استنبول اور برسا میں مختلف کلبوں اور اکیڈیمیز کے ساتھ فرینڈلی میچ کھیلیں گی۔ کراچی سے روانہ ہونے والی اس ٹیم کے بارے میںسوچ رہا تھا کہ کیا یہ کبھی فیفا تک کھیلنے تک پہنچ پائیں گی ۔
جس کا جواب خود ہی مل گیا ،کہ کیا فٹ بال کو ہمارے ملک پاکستان میں کبھی بھی کھیل سمجھ کر فروغ دینے کی کوشش کی گئی ہےتو پاکستان فٹ بال فیڈریشن پر نظر دوڑائی اور جواب ملا ،پاکستان فٹ بال پر نزع کی سی کیفیت طاری ہے۔فٹ بال میں پاکستان 203ویں نمبر پر ہے۔کیونکہ ہمارے ہاں جس کھیل پر سب سے زیادہ توجہ دی جاتی ہے اور جس کھیل میں سب سے زیادہ پیسے ہیں وہ ہے کرکٹ، باقی سارے کھیل تو کسی خاطے میں رہے ہی نہیں ہے۔ حالانکہ اگر فٹ بال کے کھلاڑیوں کو خاطر خواہ سہولتیں مہیا کی جائیں تو یہ عالم سطح پر بھی اپنے جوہر دکھا سکتے ہیں،تاہم خاطر خواہ سہولتیں نہ ملنے کے سبب فٹ بال کے کھلاڑیوں کو ملکی اور عالمی سطح پر اپنے جوہر دِکھانے کا مواقع ہی نہیں ملتا۔
گزشتہ مارچ 2018 ء میںکے الیکٹرک نے’’گرلز فُٹ بال لیگ‘‘ کروائی جس کو بطورِ مثال پیش کیا جاسکتا ہے۔ اس ٹورنامنٹ میں آٹھ ٹیمز نے حصّہ لیا، جن میں نسیم حمید فُٹ بال اکیڈمی، مارتھا ویمن فُٹ بال کلب، کراچی ککز فُٹ بال اکیڈمی، محسن جیلانی فُٹ بال اکیڈمی، ایلیٹ اسپورٹس اکیڈمی اور سوشل بونڈ کی ٹیمز شامل تھیں۔جیتنے والی ٹیم کو ایک لاکھ اوررنر اپ کو 75ہزار روپے دئیے گئے۔اس کے علاوہ پاکستان میں کوئی ایسا فٹ بال سے متعلقہ ایونٹ ہی نہیں منعقد کیا گیا جس سے فٹ بال کو فروغ دینے کی کوشش کی جاسکے۔

یہ بھی پڑھیں:  کرونا کے باعث کم ترقی یافتہ ملکوں کے لیے رعایتی قرضوں کی سہولت دی جائے:وزیراعظم

اپنا تبصرہ بھیجیں