firdos

ملکی معیشت کا بیڑہ غرق کرنے والے کیا عوام کو مزید تباہ حال کرنا چاہتے ہیں:فردوس عاشق اعوان

EjazNews

وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات کا کہنا ہے کہ بجٹ پاکستان اور اس کے عوام کے لیے ہے اس کی منظوری آئینی تقاضہ اور ملکی ضرورت ہے۔ اپوزیشن اس پرسیاست کر کے آئین کاراستہ روک رہی ہے۔ ملکی گورننس اور اداروں کی ورکنگ بجٹ کی منظوری سے جڑی ہوئی ہے۔ پارلیمان کا چلنا اور اپوزیشن کی تنخواہیں بھی بجٹ کی منظوری سے آتی ہیں۔ ملکی معیشت کا بیڑہ غرق کرنے والے کیا عوام کو مزید تباہ حال کرنا چاہتے ہیں؟
دو دن کے بعد پارلیمان کا اجلاس آج ہو رہا ہے جس میں بجٹ منظورکیا جائے گا ۔ گزشتہ روز اجلاس میں حکومتی اراکین کی جانب سے شوروغل کرنے پر اجلاس کو ملتوی کر دیا گیا تھا اس اجلاس میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے تین مرتبہ بات کرنے کی کوشش کی تھی مگر جیسے ہی وہ کھڑے ہوتے حکومتی اراکین کی جانب سے شور شروع ہو جاتا۔ ایک مرتبہ تو شہباز شریف کو ڈپٹی سپیکر سے کہنا پڑا کہ کیا آپ میری کمر درد کی پریکٹس کر وا رہے ہیں۔
یاد رہے گزشتہ روز مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز اور پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے درمیان ملاقات ہوئی ۔ اس ملاقات میں آئندہ کیلئے لائحہ عمل طے کیا گیا ۔ملاقات کے اعلامیہ میں بتایا گیا تھا کہ بجٹ میں اگر عوام کے حق پر ڈاکا ڈالا گیا ہے تو اسے منظور نہیں ہونے دیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:  کرتار پورراہداری جنوبی ایشیاء کی تاریخ میں سنگ میل ہے:ترجمان دفتر خارجہ

اپنا تبصرہ بھیجیں