Edan_Mutasreen

ایڈن ہائوسنگ متاثرین کیلئے اچھی خبر، ریکوری کی شروعات ہو گئی

EjazNews

ایڈن ہاؤسنگ کیس میں 11800 متاثرین کے اربوں روپے سالہا سال سے پھنسے ہوئے ہیں۔ایڈن ہائوسنگ کے متاثرین کا انتظام ختم ہونےکا نام ہی نہیں لےرہا ۔ یہاں تک کہ اس کیس کے مرکزملزم ڈاکٹر امجدوفات پا گئے۔

ڈاکٹر امجد ایک عرصہ تک ملک سے باہر رہے تھے۔ ڈاکٹر امجد کی وفات ہوئی تو ان کے جنازہ اور قبر پر بھی متاثرین نے احتجاج کیا تھا۔
نیب لاہور کی جانب سے 2019 میں ایڈن انتظامیہ کیخلاف 25 ارب مالیت پر مشتمل ریفرنس احتساب عدالت لاہور میں دائر کیا گیا تھا، ایڈن انتظامیہ کی جانب سے 15 ارب کی پلی بارگین کی درخواست نیب کی جانب سے تاحال مسترد کر دی گئی ہے۔

اب یہاں اس بات کا ذکر بھی کر دینا چاہئے کہ جو چیز 2019ء میں ایک روپے کی تھی وہ 2021ء میں کم از کم دس روپے کی ہو گئی ہے۔ لیکن اس کیس کے متاثرین کی رقم وہی پر ہے ۔

یہ بھی پڑھیں:  ایبٹ آباد کے نجی ہسپتال میں خاتون کے ہاں 7 بچوں کی پیدائش

شنید ہے کہ ایڈن انتظامیہ کے 25 ارب مالیت پر مشتمل اثاثہ جات نیب نے منجمد کر رکھے ہیں۔

اب منظر عام پر یہ یہ خبر آئی ہے کہ نیب نے ایک ارب کی ابتدائی ریکوری کی ہے ۔

یہاں میں اس بات کا ذکر کرتا چلو کہ نیب گزشتہ 4سالوں کے دوران بدعنوان عناصر سے 535ارب کی ریکارڈ برآمدگی کروا چکا ہے جسے حکومتی خزانہ و متعلقہ متاثرین کے حوالہ کیا جا رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں