US_Dollar

ڈالرکی قیمت سال کی بلندترین سطح پر ،مہنگائی مزید بڑھنے کا خدشہ

EjazNews

ڈالرکی قیمت سال کی بلندترین سطح پرپہنچ گئی جس کے بعد روز مرہ استعمال کی اشیاء مزید مہنگی ہونے کا خدشہ ہے۔

گزشتہ روز ڈالر 168 روپے 9 پیسے کی سطح پر بند ہوا تھا ۔انٹر بینک میں 80 پیسے اضافے کے ساتھ ڈالر کی قدر 168 روپے 90 پیسے جبکہ اوپن مارکیٹ میں اس کی قدر 70 پیسے کے اضافے کے بعد 169 روپے 70 پیسے ہوگئی۔

10 ستمبر 2021 کو ڈالر 13 ماہ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا تھا جب یہ ریکارڈ 168 روپے 20 پیسے پر ٹریڈ کرنے کے بعد بند ہوا۔
اس سے قبل گزشتہ برس 26 اگست کو ڈالر 168 روپے 43 پیسے کی سب سے بلند سطح پر پہنچا تھا جس کے بعد کمی کا سلسلہ جاری تھا۔

تاہم بلند کرنٹ اکاؤنٹ خسارے اور درآمدی بل سمیت متعدد وجوہات کی بنا پر رواں برس مئی سے ڈالر کی قدر میں اضافہ جاری ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  سنگا پور کی ایکسپورٹس 330 ارب ڈالر ہیں، ہماری اب جاکے 25 ارب ڈالر ہوئی ہے اور ہم ہیں 22 کروڑ لوگ:وزیراعظم

اب سوال پیدا ہوتا ہے کہ اس سارے کام سے مہنگائی کیسے بڑھنے کا خدشہ ہے۔ اس کی ایک بڑی وجہ یہ ہے کہ ہم آئل تک کا بڑا حصہ بیرون ممالک سے منگواتے ہیںاور یہ ڈالر سے جڑے ہوئے ہیں۔

وزیراعظم اپنی متعدد تقریروں میں ذکر کر چکے ہیں کہ ہم دالیں بھی بیرون ممالک سے منگواتے ہیں۔ اب یہ دالیں روپے دے کرتو نہیں ملتی ہیں ۔ ظاہر ہے ڈالرز میں ہی ملتی ہیں۔

اور ایسی متعدد مثالیں موجود ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں