Shah_Mahmood_Qurashi

پاکستان نے مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے مظالم کے ڈوزیئر پیش کر دئیے

EjazNews

اسلام آباد میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ حریت کے رہنما طویل علالت اورعرصہ دراز جیل کاٹنے کے بعد انتقال کر گئے ۔ آپ نے دیکھا کہ ان کے ساتھ کیا گیا ۔ ان کا جسد خاکی چھینا گیا۔ ان کے تدفین کی جگہ پر ان دفن نہ کر نے دیا گیا۔ رات کی تاریکی میں ان کو دفنایا گیا۔ اتنی بڑی شخصیت کو ان کے شایان شان کفن دفن ہونا حق تھا لیکن ان کے ساتھ کیا ہوا۔ اس کیفیت کو دیکھ دنیا بھر کے کشمیری دہل گئے ہر پاکستانی اس افسوسناک واقعہ کے بعد بے پناہ تکلیف میں پاکستانی بھی رہا۔جس سوچ کی حامل وہاں حکومت ہے اس کا چہرہ دنیا کے سامنے بے نقاب کرنا چاہئے یہ کہتے کیا ہیں اور کرتے کیا ہیں۔

ان کا کہنا تھا مقبوضہ کشمیر میں تو آزادانہ رسائی نہیں ہے۔ حقائق کو توڑ مروڑ کر دکھائے جاتے ہیں ۔ دنیا کے سامنے حقائق آنے ہی نہیں دیتے۔ اور غلط رپورٹنگ پلاننگ کے تحت کی جاتی ہے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ ڈوزئیر دے رہے ہیں۔ یہ ڈوزئیر 131صفحات پر مشتمل ہے۔ اس کے ایک حصے میں انڈین فوج کے ظلم و ستم کے بارے میں بتایا گیاہے ۔دوسرے حصے میں بتایا گیا ہے کہ کس طرح مقبوضہ کشمیر میں انڈیا استحصال کر رہا ہے جس کے باعث وہاں ایک ریزیزسٹینس پیدا ہو رہی ہے۔تیسرے حصے میں اقوام متحدہ کی رپورٹ کا ذکر ہے جو کشمیر کے معاملے سے روح رکھتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  تاریخی آیا صوفیا مسجد میں آج جمعہ کی نماز ادا کی جائے گی

ان کا کہنا تھا کہ کہا جاتا ہے کہ یہ ڈوزئیر ہیں یہ تو پیش کیے جاتے ہیں لیکن ایسا نہیں ہیں اس میں پاکستانی ریسورسز بہت کم ہیں اس میں انٹرنیشنل اور انڈیا سے لیے گئے حوالے ہیں۔اس ڈوزئیر میں پاکستان کے حوالے صرف 14ہیں باقی سارے انٹرنیشنل اور انڈیا سے لیے گئے ہیں۔

ان کا کہناتھا 26 حوالہ جات انٹرنیشنل میڈیا، 41 بھارتی اور 32 حوالہ جات بین الاقوامی انسانی حقوق کی تنظیموں کے ہیں۔
وزیر خارجہ نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جنگی جرائم کے 3 ہزار 432 کیسز کا تذکرہ ہے، ایک ہزار 128 ان لوگوں کی نشاندہی کی گئی جنہوں نے جنگی جرائم مرتب کرنے میں ملوث تھے، اس میں ایک میجر جنرل کا سطح کا افسر بھی شامل ہے۔جنگی جرائم میں ایک میجر جنرل، 5بریگیڈیئرز، 4 آئی جیز، 7 ڈی آئی جیز، 131 کرنلز، 186 میجرز اور کیپٹنز ہیں اور 118 یونٹس کا بھی تذکرہ کیا جو انسانی حقوق کے خلاف ورزی میں ملوث رہی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  ہماری سب سے بڑی طاقت نوجوان ہیں :وزیراعظم

ان کا کہنا تھا کہ بھارتی مظالم کی وجہ سے ایک لاکھ بچے یتیم ہوئے، ایک لاکھ املاک کو دانستہ طور پر نقصان پہنچایا گیا، اسلحہ رکھ کر مظلوم کشمیریوں کو گرفتار کیا جاتا ہے کہ تحریک کو نقصان پہنچے۔

پریس کانفرنس میں مقبوضہ کشمیر میں شہید کیے گئےنوجوانوں سے متعلق بھارتی افسران کی آڈیو بھی سنائی گئی۔

ان کا کہنا تھا مقبوضہ کشمیر کے 6 اضلاع کے 89 گاؤں میں 8 ہزار 652 اجتماعی قبریں دریافت ہوئیں جس میں سے 154 قبروں میں 2، 2 افراد جبکہ 23 قبروں میں 17 سے زائد افراد کی لاشیں تھیں۔بھارتی فوج نے 2017 سے مقبوضہ کشمیرمیں کیمیکل ہتھیار استعمال کیے جس سے 37 کشمیری جاں بحق ہوئے جبکہ 2014 سے اب تک بھارتی فورسز کے ہاتھوں 3 ہزار 850 عصمت دری کے واقعات پیش آئے، 650 خواتین کو قتل کردیا گیا۔
ڈوزیئر میں دی گارجین کا حوالہ دیا گیا کہ 10 ہزار کشمیریوں کو جبری لاپتا کردیا گیا، بھارتی فورسز نے 2014 کے بعد سے اب تک 120 کشمیری بچوں کو فائرنگ کرکے قتل کیا۔

یہ بھی پڑھیں:  حکومتی اراکین تاریخی مہنگائی اور بے روزگاری کے بعدعوام کو منہ دکھانے کے قابل نہیں :بلاول

فراہم کردہ معلومات کے مطابق بھارتی فورسز کی جانب سے استعمال کی گئی پیلٹ گن سے ایک ہزار 253 نوعمر لڑکے نابینا اور 15 ہزار 438دترین زخمی ہوئے۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز نے محاصرہ اور سرچ آپریشن کے نام پر 6 ہزار 479 املاک کو تباہ کیا اور ایسے آپریشن کی تعداد مجموعی طور پر 15 ہزار 495 رہی۔

سنائی گئی آڈیو میں کہا جارہا تھا کہ انہو ں نے ابھی تک فوج کی طاقت نہیں دیکھی، ان کی کوٹاہی ہوئی ہے ، پولیس نے بھی ماحول گرم کر رکھا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں