Sindh_govt

سندھ کے بلدیاتی انتخابات

EjazNews

الیکشن کمیشن نے سندھ میں بلدیاتی انتخابات کروانے سے متعلق کیس پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ الیکشن کمیشن کاجو فیصلہ ہوگااس کا اطلاق سب صوبوں پر ہو گا ، الیکشن کمیشن قومی مفاد میں فیصلہ کرے گا۔

سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کے معاملے پر الیکشن کمیشن میں چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سماعت کی ۔

ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضی وہاب ، وزیر بلدیات ناصر شاہ ، ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل سندھ فوزی ظفر الیکشن کمیشن بھی کمیشن میں پیش ہوئے ۔ سپیشل سیکرٹری الیکشن کمیشن ظفر اقبال ملک بھی موجود تھے ۔

سندھ حکومت نے مردم شماری پر دائر اپیل کا فیصلہ آنے پر بلدیاتی انتخابات منعقد کرانے سے معذرت کی تھی۔ الیکشن کمیشن نے سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کی روزانہ کی بنیاد پر سماعت کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ ڈی جی لا ء محمد ارشد خان الیکشن کمیشن نے کہا بلدیاتی انتخابات کرانا صوبائی حکومت کی آئینی ذمہ داری ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  چیئرمین نادرا نے جعلی شناختی کارڈ بنانے کے الزام میں کتنے ملازمین کو برخاست کیا ہے؟

انہوں نے کہا سندھ حکومت آئینی ذمہ داری پوری کرنے میں تاخیر کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا آرٹیکل 32 اور 140 بھی بلدیاتی اداروں کو مضبوط کرنے کی ہدایت کرتا ہے۔ انہوں نے کہا سپریم کورٹ بلدیاتی انتخابات کرانے کے حوالے سے 2015 میں فیصلہ سنا چکی ہے۔ انہوں نے کہا سپریم کورٹ نے الیکشن کمیشن کو بلدیاتی انتخابات کرانے کی ذمہ داری پوری کرنے کا حکم دیا۔ سندھ حکومت نے بلدیاتی انتخابات کرانے کیلئے مردم شماری کے نتائج کی شرط رکھی۔ اب سندھ حکومت مردم شماری کے نتائج پر اعتراضات کر رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ مردم شماری کے نتائج جاری ہونے کے بعد سندھ حکومت نے نیا اعتراض لگادیا ہے، انہوں نے کہا الیکشن کمیشن کو بلدیاتی انتخابات کرانے کیلئے سی سی ائی کے فیصلے کا انتظار نہیں کرنا چاہیے۔

انہوں نے کہا پارلیمنٹ کا پانچ سال تک مشترکہ اجلاس نہ بلایا جائے تو کیا بلدیاتی انتخابات پانچ سال تک نہیں ہوں گے؟الیکشن کمیشن پارلیمنٹ کا انتظار کیے بغیر بلدیاتی انتخابات کرانے کا حکم دے،انہوں نے کہا صوبائی حکومت کو حکم دیا جائے کہ ہمیں نقشہ جات اور ڈیٹا دیا جائے، تاکہ الیکشن کمیشن حلقہ بندی کرا کے الیکشن کا انعقاد کرائے۔

یہ بھی پڑھیں:  پہاڑ پر بنایا جانیوالا سب سے بڑے 450فٹ لمبا قومی پرچم

اپنا تبصرہ بھیجیں