Misbah_ul_haq

مصباح الحق اور وقار یونس نے اپنے عہدوں سے استعفیٰ دے دیا

EjazNews

مصباح الحق اور وقار یونس کو ستمبر 2019 میں قومی ٹیم کے کوچز کے طور پر مقرر کیا گیا تھا اور ان کے کنٹریکٹ میں اب بھی ایک سال باقی تھا۔

نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کو تین ون ڈے اور پانچ ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز کھیلنے کے لیے 12 ستمبر کو پاکستان پہنچنا ہے جس کے لیے پاکستانی ٹیم 9 ستمبر کو اسلام آباد پہنچے گی۔

مصباح اور وقار یونس کے بعد اس سیریز میں ثقلین مشتاق اور عبدالرزاق قومی کرکٹ ٹیم کے عبوری کوچز کی حیثیت سے ذمہ داریاں نبھائیں گے۔

پی سی بی کی جانب سے جاری پریس ریلیز کے مطابق مصباح الحق نے اپنے بیان میں کہا کہ انہوں نے جمیکا میں قرنطینہ کے دوران اپنے 24 ماہ کا جائزہ لیا۔

انہوں نے کہا کہ جانتا ہوں کہ یہ آئیڈیل وقت نہیں مگر فی الحال ایسے فریم آف مائنڈ میں نہیں کہ آئندہ چیلنجز سے نبرد آزما ہوسکوں۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستانی ٹیم نیوزی لینڈ میں سیریز ہار گئی

مصباح الحق نے کہا کہ وہ اپنے اہلخانہ کے ساتھ وقت گزارنا چاہتے ہیں۔

پریس ریلیز کے مطابق وقار یونس کا کہنا تھا کہ مصباح الحق نے اپنا فیصلہ بتایا تو انہوں نے بھی عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ کرلیا تھا۔

Waqar_Younus
وقار یونس

انہوں نے کہا کہ وہ پاکستان کے نوجوان باولرز کے ساتھ کام کرنے پر مطمئن ہیں۔

پی سی بی کے چیف ایگزیکٹو وسیم خان کا کہنا تھا کہ پی سی بی مصباح الحق کے فیصلے کا احترام کرتی ہے، گزشتہ 24 ماہ میں انہوں نے اپنی تمام تر توانائیاں پاکستان کرکٹ کے لیے صرف کیں۔

انہوں نے کہا کہ وقار یونس نے جرات مندانہ فیصلہ کیا ہے، ہم نے ثقلین مشتاق اور عبدالرزاق کو عبوری کوچز کی حیثیت سے نیوزی لینڈ سیریز کے لیے مقرر کردیا ہے۔

پریس ریلیز میں کہا گیا کہ آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2021 کے لیے ٹیم مینجمنٹ کا اعلان مناسب وقت پر کردیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:  دوسرا ٹی ٹونٹی انگلش ٹیم نے جیت لیا

مصباح الحق اور وقار یونس کا مستعفی ہونے کا فیصلہ ایسے وقت میں سامنے آیا جبکہ کچھ دیر قبل ہی چیف سلیکٹر محمد وسیم نے اگلے ماہ ہونے والے ٹی 20 ورلڈ کپ کے ساتھ ساتھ نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے خلاف آئندہ ہوم سیریز کے لیے قومی ٹیم کا اعلان کیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں