Govt_Pakistan

وفاقی ملازمین کے رینٹل سیلنگ میں اضافہ کی سمری وزیر اعظم کو ارسال، کس گریڈ کیلئے کیا تجویز ہے؟

EjazNews

وزارت ہا ئوسنگ و تعمیرات نےان سر کاری ملازمین جنہوں نے پر ائیویٹ مکان ہائر کئے ہوئے ہیں کی رینٹل سیلنگ میں اضافہ کیلئے سمری وزیر اعظم کو منظوری کیلئے بھیج دی ہے۔

سمری میں سفارش کی گئی ہے کہ وفاقی حکومت کے گریڈایک سے 22تک کے ملازمین کیلئے اسلام آ باد ،رواولپنڈی ،لاہور ،کراچی ،پشاور اور کوئٹہ کے شہروں کیلئے ان کی رینٹل سیلنگ کی موجودہ شرح میں 44فی صد اضافہ کردیا جا ئے ۔

سمری میں کہاگیا ہے کہ رینٹل سیلنگ میں 25جون2018کو 50فیصد اضافہ کیا گیا تھا۔ اس کے بعد سے بڑے شہروں میں آ بادی کے بڑھتے ہوئے دبائو کی وجہ سے کرایوں میں بہت اضافہ ہو گیا ہے۔

مالکان نے کرائے بڑھا دئیے ہیں اور سر کاری ملازمین مو جودہ شرح اور حقیقی کرایہ کا فرق اپنی جیب سے ادا کرتے ہیں ۔اس کا نتیجہ یہ ہے کہ سر کاری مکانوں کی الاٹمنٹ کیلئے اسٹیٹ آفس پر دبائو بڑھ گیا ہے اور اس وقت اسٹیٹ آفس کے پاس سر کاری مکانوں کی الاٹمنٹ کیلئے 28ہزار در خواستیں زیر التوا ہیں ۔اسٹیٹ آفس کے پا س مکان محدود ہیں کیونکہ 1995 کے بعد سے نئے سر کاری مکان تعمیر نہیں کئے گئے ۔فنانس ڈویژن نے بھی اتفاق کیا ہے کہ رینٹل سیلنگ میں44فیصد اضافہ کر دیا جا ئےلہٰذا اضافہ کی تجویز منظور کی جا ئے ۔

یہ بھی پڑھیں:  اسٹیٹ بینک نے بینکوں کو کیا ہدایات کی ہیں، جس پر پنلٹی کا بھی کہہ دیا ہے

سمری میں اضافہ کا نیا چارٹ بھی تجویز کیا گیا ہے۔ اسلام آ باد کیلئے گریڈ ایک سے دو تک کی نئی رینٹل سیلنگ 7029 روپےگریڈتین سے چھ تک 10980گریڈ سات سے دس تک 16403گریڈ گیارہ سے تیرہ 24744گریڈ چودہ سے سولہ 31085گریڈ سترہ اور اٹھارہ 41147گریڈ انیس 54704گریڈ بیس 68700گریڈ 21 کیلئے 82261روپے اور گریڈ22کیلئے 98444روپے تجویز کئے گئے ہیں۔

اسلام آ باد کے علاوہ دیگر شہروں کیلئے گریڈ 1 سے 2 کیلئے 6591روپےگریڈ3 سے 6 تک 9654گریڈ 7 سے 10 تک 14682گریڈ 11 سے 13 تک 21462گریڈ14سے16 تک 27134گریڈ17 اور18 تک 35898گریڈ 19 کیلئے46816گریڈ20 کیلئے 59079گریڈ21 کیلئے 71107گریڈ22کیلئے89230روپے تجویز کئے گئے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں