ALiGilani

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کے خلاف آزادی کے نعرے لگانا حریت رہنما کے اہلخانہ کا جرم بن گیا

EjazNews

مقبوضہ کشمیر میں پولیس نے حریت رہنما سید علی گیلانی کے لواحقین کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔سید علی گیلانی کے اہلخانہ نے آزادی کے حق کیلئے نعرے پولیس کی جانب سے حریت رہنما کی میت چھیننے کےدوران لگائے تھے۔

سید علی گیلانی کے اہل خانہ کے خلاف مقدمہ بڈگام پولیس اسٹیشن میں درج کیا گیا ہے۔

گذشتہ دنوں قابض بھارتی فوج کی جانب سے سید علی گیلانی کی میت ان کے گھر سے زبردستی لے جانے کے مناظر سامنے آئے تھے۔ ویڈیو میں اہلخانہ کو چیخ پکار کرتے دیکھا جاسکتا ہے۔

قابض بھارتی فوج نے علی گیلانی کے اہلخانہ پر تشدد کیا اور انہیں ایک کمرے میں بند کردیا۔

اس موقع پر سید علی گیلانی کے اہلخانہ نے آزادی کے حق میں نعرے لگائے تھے۔اہلخانہ کا مطالبہ تھا کہ علی گیلانی کی تدفین ان کی خواہش کے مطابق مزار شہداء میں کرنے دی جائے لیکن بھارتی فوج نے رات کے اندھیرے میں حیدر پورہ قبرستان میں ان کی تدفین کردی، علی گیلانی کی میت پاکستان کے سبز ہلالی پرچم میں لپیٹی گئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں:  ڈونلڈ ٹرمپ کا پہلی مرتبہ طالبان سے ٹیلی فونک رابطہ، امن کی طرف پیشرفت

اپنا تبصرہ بھیجیں