Sarah Storey

سب سے کامیاب برطانوی پیراولمپیئن

EjazNews

سائیکلسٹ سارہ سٹوی نے ٹوکیو میں جاری پیرا لمپکس مقابلوں ایک اور طلائی تمغہ جیت کے سب سے کامیاب برطانوی پیراولمپیئن بن گئیں۔

43 سالہ سارہ سٹوی نے روڈ ریس جیت کر17واں طلائی تمغہ اپنے نام کیا۔ ٹوکیو میں جاری پیراو لمپکس مقابلوں میں انہوں نے 3 طلائی تمغے جیتے ہیں۔

پیراولمپکس میں مجموعی طور پر 17طلائی تمغے جیت کرڈیم سارہ نے برطانوی تیراک مائیک کینی کے 16 طلائی تمغوں کا ریکارڈ توڑ دیا ہے۔

ڈیم سارہ کو روڈ ریس کے لیے فیورٹ قرار دیا گیا تھا۔ 16واں طلائی تمغہ جیتنے پر انہوں نے کہا تھا کہ میں اس سفر پر کبھی برطانیہ کی سب سے بڑی پیراولمپین بننے کے لیے نہیں نکلی تھی لیکن بہترین پیراولمپیئن کے برابر پہنچنااور ان سے زیادہ تمغے حاصل کرنا صرف ایک خواب تھا جو پورا ہورہاہے۔

یاد رہے کہ ڈیم سارہ سٹوری نے حالیہ پیراولمپکس مقابلوں میں تین تمغے جیتے ہیں جس کے بعد ان کے مجموعی گولڈ میڈلز کی تعداد 17 ہو گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  اجلاس کی باتیں، میٹنگ روم تک رہیں تو زیادہ اچھا ہے:بابر اعظم

سارہ سٹوری نے پچس اگست کو ٹوکیو پیراولمپک گیمز 2020 میں خواتین کے C5 3000 میٹر انفرادی مقابلے میں پہلا طلائی تمغہ جیتا۔ یہ ڈیم سارہ کے پیراولمپک کیریئر کا 15 واں طلائی تمغہ تھا۔

ایک سابق تیراک ہونے کے ناطے ، انہوں نے 1992 کے سمر پیرالمپکس میں 100 میٹر بیک اسٹروک اور 200 میٹر انفرادی میڈلے میں دو طلائی تمغے جیتے۔

1996 کے پیرالمپکس میں ، اسٹوری نے 100 میٹر بریسٹ اسٹروک ، 100 میٹر بیک اسٹروک اور 200 میٹر انفرادی میڈلے میں تین طلائی تمغے جیتے۔

43 سالہ ایتھلیٹ نے 2008میں مزید دوپیرالمپک طلائی تمغے جیتے ، اس بار سائیکلنگ میں بشمول ٹائم ٹرائل اور انفرادی تعاقب میں۔

2012 کے پیرالمپکس میں ، انہوں نے انفرادی تعاقب ، 500 میٹر ٹائم ٹرائل ، ٹائم ٹرائل اور روڈ ریس میں چار طلائی تمغے جیتے۔

انہوں نے انفرادی تعاقب ، ٹائم ٹرائل اور روڈ ریس میں 2016 کے پیرالمپک گیمز میں مزید تین طلائی تمغے جیتے۔

یہ بھی پڑھیں:  محمد رضوان آئی سی سی رینکنگ میں ساتویں نمبر پر آنے میں کامیاب

اپنا تبصرہ بھیجیں