Islambad_Pakistan

اسلام آباد کے ہوٹلوں میں ٹرانزٹ مسافروں کا بڑی تعداد میں قیام، سکیورٹی سخت

EjazNews

ہوٹلوں کے اندر اور اطراف میں سکیورٹی انتظامات سخت کر دئیے گئے ہیں اور پولیس اور پیراملٹری اہلکاروں کو ہائی الرٹ رکھا گیا ہے۔

ذرائع نے کہا کہ سفارت کاروں، غیر ملکی مشنز کے دیگر عملے اور صحافیوں سمیت ہزاروں غیر ملکیوں کے آئندہ چند ہفتوں میں اسلام آباد آنے کا امکان ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جمعہ کو پڑوسی ملک سے تقریباً ڈیڑھ ہزار غیر ملکی مختلف پروازوں سے دارالحکومت پہنچیں گے، جبکہ آئندہ چند ہفتوں میں روز ایک ہزار سے زائد غیر ملکیوں کے اسلام آباد پہنچنے کا امکان ہے۔

عہدیداران نے کہا کہ جمعرات کو کابل ایئرپورٹ پر متعدد دھماکوں کے باعث افغانستان سے غیر ملکیوں کے انخلا کے عمل میں تیزی آئے گی۔

انہوں نے کہا کہ یہ ٹرانزٹ مسافر وفاقی دارالحکومت میں مختصر قیام کے بعد اپنے اپنے ممالک چلے جائیں گے۔

وفاقی دارالحکومت کی انتظامیہ نے تمام ہوٹلوں کی انتظامیہ سے کہا ہے کہ وہ جمعہ سے اگلے 21 روز کے لیے ریزرویشنز بند کردیں اور ہوٹلوں کے تمام خالی کمروں کے معاملات انتظامیہ کے سپرد کردیں۔

یہ بھی پڑھیں:  نبی اکرمؐ کے موئے مبارک کی پاکستان آمدزیارت کیلئے ہزاروں لوگ امڈ آئے

ان کا کہنا تھا کہ اب تک ہوٹلز میں قیام پذیر لوگوں سے جانے کا نہیں کہا گیا ہے اور ان سے یہ درخواست ضرورت پڑنے پر کی جائے گی۔

ضلعی مجسٹریٹ کے دفتر سے جاری نوٹی فکیشن میں کہا گیا ہے کہ سرحد کے اس پار صورتحال کے پیش نظر ہزاروں افراد کا افغانستان سے انخلا کرایا گیا ہے اوراسی مقصد کے تحت ٹرانزٹ فلائٹ استعمال کرنے والے مسافر اسلام آباد میں قیام کر رہے ہیں۔

نوٹی فکیشن میں کہا گیا کہ مسافروں کی سہولت کے لیے درخواست کی جاتی ہے کہ کم از کم اگلے 21 روز کے لیے اسلام آباد کے تمام ہوٹلوں میں ریزرویشنز بند کردی جائیں۔

مزید کہا گیا کہ ہوٹلوں میں تمام خالی کمروں کے معاملات اگلے احکامات تک مسافروں کے قیام کے لیے انتظامیہ کے سپرد کردیے جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں