Taliban_2

طورخم اور چمن کے راستے حالیہ دنوں میں کاروبار میں کتنا اضافہ ہوا ہے

EjazNews

اسلام آباد میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ بھارت پاک چین اقتصادی راہداری کے خلاف سازشوں میں ملوث ہے اور اس کے لیے کالعدم تحریک طالبان پاکستان اور بی ایل ایف کو استعمال کررہا ہے۔ ہم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں امریکا کے اتحادی ہونے کی بہت بڑی قیمت ادا کی ہے، ہم نے تاریخی کردار ادا کیا جبکہ ہم نے 80 ہزار لوگوں کی جان کا نذرانہ پیش کیا اور لاکھوں معذور ہوئے ہیں جبکہ افغانستان میں رونما ہونے والی سیاسی صورتحال کے بعد طورخم اور چمن کے راستے حالیہ دنوں میں 65 فیصد تک کاروباری سرگرمیوں میں اضافہ ہوا۔

ان کا کہنا تھا کہ افغانستان سے 15 سے 24 اگست کے دوران تقریبا 2500 لوگوں کو پاکستان لائے ہیں جس میں 500 لوگ دوسرے ممالک جائیں گے جبکہ 15 سو لوگ طورخم کے راستے ملک میں داخل ہوئے ہیں۔ جو لوگ پاکستان آئے ہیں، وزارت داخلہ کا کام ہے کہ انہیں طورخم سرحد تک پہنچا دیں باقی وہ جانیں ان کا کام جانیں، پاکستان پر مہاجرین کا کوئی بوجھ نہیں ہے، حالیہ پانچ دنوں میں چمن کے راستے سے بزنس میں اضافہ ہوا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  5اگست2020یو م استحصال کے طور پر منایا جائے گا:وزیر خارجہ

وزیر داخلہ نے کہا کہ آئندہ چند روز میں وزیر اعظم عمران خان، افغانستان کی سیاسی صورتحال پر قوم سے خطاب کریں گے، اسلام آباد میں آئندہ برسوں میں سکیورٹی کی مزید ضرورت ہوگی، اسلام آباد میں 11 سو سے زائد کیمرے لگائے جائیں گے جبکہ سکیورٹی کا نیا نظام لا رہے ہیں جہاں سے ملک کے حصوں سے جوڑ دیا جائے گا تاکہ سکیورٹی کے نظام کو مربوط بنایا جا سکے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں