rape

شیطان صفت درندے: مدفون خاتون کی لاش کی بے حرمتی کرنے سے باز نہ آئے

EjazNews

ٹھٹھہ کے نواحی علاقہ غلام اللہ میں شیطان صفت درندوں نے قبرستان میں گزشتہ روز مدفون خاتون کی نعش کو مبینہ طور پر بے حرمتی کرکے نعش کھیتوں میں پھینک کر فرار ہوگئے۔

علاقہ مکینوں نے خاتوں کی لاش قبرستان کے قریب کھیت میں دیکھ کر ورثاء اور پولیس کو اطلاع دی ۔

ایک بیان میں پولیس حکام نے دعویٰ کیا کہ لاش کی بے حرمتی کے بعد پولیس نے فوری طور پر جائے واردات پہنچی اور تفصیلات اکٹھی کیں۔

بیان میں کہا گیا کہ غلام اللہ ٹاؤن کے نزدیک ایک قبرستان میں 14 سالہ لڑکی کی لاش 13 اگست کی رات 11 بجے دفن کی گئی تھی جو اگلے روز گنوں کے کھیتوں میں پائی گئی۔

بعدازاں لاش کو طبی معائنے کے لیے ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں ڈبلیو ایم او نے میت کا ریپ ہونے کی تصدیق کی۔

سندھ کے ضلع ٹھٹہ کے گاؤں مولوی اشرف چانڈیو میں نامعلوم افراد نے ایک نوجوان لڑکی کی دفن کی گئی تازہ میت نکال کر اس کا ریپ کردیا۔

یہ بھی پڑھیں:  پولیس موبائل سے 76 کلو چرس بر آمدکرلی

لڑکی کے والدین اور رشتہ داروں نے صحافیوں کو بتایا تھا کہ انہیں یقین ہے کہ ایک مقامی بدمعاش جو کہ گاؤں کے وڈیرے کا بیٹا ہے اس گھناؤنے جرم میں ملوث ہے۔

انہوں نے بتایا کہ 14 سالہ لڑکی کی موت قدرتی طور پر ہوئی تھی جسے ایک رات قبل گاؤں کے قبرستان میں دفنانے کے بعد وہ واپس آگئے تھے۔

تاہم اگلے روز صبح جب والدین مقامی روایات کے مطابق قبرستان پہنچے تو دیکھا کہ قبر کھدی ہوئی تھی اور اس میں لاش غائب تھی۔
بعدازاں لاش قریبی جنگل میں ایک کھائی سے ملی جس پر ریپ کے نشانات تھے۔

انہوں نے بتایا تھا کہ والدین نے اس معاملے کی اطلاع پولیس کو دی لیکن انہوں نے کوئی توجہ نہیں دی اور اس گھناؤنے جرم کو معمولی سمجھا۔

رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ والدین لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے ٹھٹہ کے سول ہسپتال لے کر آئے جہاں میڈیکل سپرنٹنڈنٹ نے لاش کے ریپ کی تصدیق کی۔

یہ بھی پڑھیں:  محکمہ داخلہ پنجاب نے پچھلے سالوں میں کتنے اسلحہ لائسنس جاری کئے ہیں

دوسری جانب سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ مذکورہ گاؤں پہنچے تھے اور متاثرہ والدین سے ہمدردی کی۔

جس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ مجرمانہ غفلت برتنے پر وزیراعلیٰ سندھ کے حلقے کے رہائشی ایس ایچ او غلام حسین کچھڑ کو بھی مقدمے میں نامزد کیا جانا چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ سندھ ریاست کے اندر ریاست بن گیا ہے جہاں پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے وڈیرے اپنے علاقوں میں خود حکمرانی کرتے ہیں۔

حلیم عادل شیخ نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت سے حکمرانی کا حق چھن گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں