arif_alvi

صدر مملکت اور وزیراعظم کا قوم کے نام پیغام

EjazNews

صدرِ مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے پاکستان کے یوم آزادی کے موقع پر قوم کے نام پیغام میں کہا کہ ‘اپنے 74 سالہ سفر کے دوران پاکستان نے بہت سے چیلنجز کا سامنا کیا، مگر ہم اپنی محنت، قربانیوں اور قوم کے تعاون سے ان چیلنجز میں سرخرو ہوئے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستانی قوم ایک ذہین اور بہادر قوم ہے اور مختلف شعبہ جات میں ہماری نمایاں کامیابیاں ہمیں دوسری اقوام سے ممتاز کرتی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہہ دنیا کو اس امر کی تعریف کرنا ہوگی کہ پاکستان نے انفرادی طور پر دہشت گردی کے خلاف طویل جنگ لڑی اور بالآخر اس عفریت کو شکست دی۔

ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ اسی طرح پاکستان کا جوہری طاقت بننا بھی ایک بڑی کامیابی ہے اور ہماری جوہری صلاحیتوں نے ملک کے دفاع کو ناقابل تسخیر بنا دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ پاکستان کئی دہائیوں سے لاکھوں افغان پناہ گزینوں کی میزبانی کر رہا ہے، علاوہ ازیں، کورونا وبا کے خلاف پاکستان کے موثر اقدامات کو بھی عالمی سطح پر سراہا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  آپ کا کردار ایسا ہونا چاہئے کہ لوگ آپ کی عزت کریں: چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ

ان کا کہنا تھا کہ کورونا وبا کے خلاف اس عظیم کامیابی پر میں ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکس، علمائے کرام، میڈیا، نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی)، سیکیورٹی فورسز اور پوری قوم کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

imran_khan_message1

صدر مملکت نے کہا کہ ہمارے معاشی اشاریوں میں بہتری آنے کے اثرات عوام تک پہنچنا شروع ہو گئے ہیں، یہ ایک حوصلہ افزا امر ہے کہ حکومت نے قرضوں اور ہنر کی فراہمی کے ذریعے خواتین اور معذور افراد کو معاشی طور پر بااختیار بنانے کے لیے اقدامات اٹھائے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم تنازع جموں و کشمیر پر کشمیریوں کی اخلاقی، سیاسی اور سفارتی حمایت جاری رکھنے کے عزم کی بھی تجدید کرتے ہیں، میں بین الاقوامی برادری سے بھی اپیل کرتا ہوں کہ وہ بھارت کو مجبور کرے کہ وہ مقبوضہ جموں و کشمیر کے بےگناہ مسلمانوں کے خلاف انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بند کرے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس دن ہم بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح اور تحریک پاکستان کے رہنماوں اور کارکنان کو بھرپور خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔

وزیر اعظم عمران خان قوم کے نام اپنے پیغام میں کہا کہ آج یوم آزادی کے موقع پر قومی پرچم لہراتے ہوئے ہمیں ایمان، اتحاد، تنظیم کی قومی اقدار کو سربلند رکھنے کے پختہ عزم کا اعادہ کرنا چاہیے جس کا تصور قائد اعظم محمد علی جناح ؒنے پیش کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  وزیراعظم کا ریلیف فنڈ :ایک گھنٹے میں پاکستانیوں نے13کرو ڑ میں جمع کرودئیے

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے ایک متحد، پرامن اور پرعزم قوم کی حیثیت سے ابھرنے کے لیے اپنی تاریخ کے سفر میں کٹھن چیلنجز عبور کیے ہیں، آج بھی اندرون ملک بعض درپیش مسائل کے ساتھ ساتھ خطے کی بدلتی صورتحال ہمارے اس عزم کا امتحان ہے لیکن ہر وقت کی طرح ہم اپنے عزم صمیم کی بدولت ان رکاوٹوں پر قابو پالیں گے اور مضبوط تر قوم کے طور پر ابھریں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان آج اقوام عالم کے درمیان سر اٹھا کر کھڑا ہو سکتا ہے، معیشت کی بحالی، کورونا وبا سے نبرد آزما ہونے اور ماحولیاتی تحفظ بارے میں ہماری پالیسیوں کو دنیا بھر میں پذیرائی ملی ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ اس موقع پر ہمیں اپنے کشمیری بہن بھائیوں کو نہیں بھولنا چاہیے جو انتہائی نامساعد حالات اور بھارتی غیر قانونی قبضے میں ناقابل بیان جبر میں اپنے حق خودارادیت کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں، کشمیر کے عوام اپنے ساتھ کیے گئے وعدوں کی تکمیل کے لیے عالمی برادری کی طرف دیکھ رہے ہیں، پاکستان حق خودارادیت کے حصول کی جدوجہد میں کشمیریوں کی حمایت جاری رکھے گا۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستان افغان امن عمل میں سہولت کار کا کردار ادا کر رہا ہے لیکن گارنٹر نہیں ہے:وزیر خارجہ

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے اپنی مغربی سرحدوں پر غیر مستحکم صورتحال کے باعث بڑی قربانیاں دی ہیں اور اس کی بھاری قیمت چکائی ہے، ہم نے ہمیشہ اس بات پر مسلسل زور دیا ہے کہ افغانستان کے تنازع کا کوئی فوجی حل نہیں ہے جبکہ افغانستان میں دیرپا امن و استحکام کے لے پاکستان افغان تنازع کے مذاکرات سے سیاسی حل کی حمایت جاری رکھے گا، اپنے معاشی و سماجی ایجنڈے کی پیروی کے لیے ہم اندرون اور بیرون امن چاہتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ نئے پاکستان میں ہماری تمام تر توجہ جیو پالٹیکس سے اب جیو اکنامکس پر مرکوز ہوگئی ہے جس میں ہم اولین ترجیح کے طور پر پاکستانی عوام کی فلاح و بہبود اور خوشحالی پر توجہ دے رہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں