President Ebrahime Raeisi

ایرانی صدر کی تقریب حلف برداری میں کون سی اہم شخصیات شریک ہوئیں

EjazNews

ایران کے نو منتخب صدر ڈاکٹر سید ابراہیم رئیسی نے اپنےعہدے کا حلف اٹھالیا ہوا ہے۔ اس موقع پر اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ وہ امریکی پابندیوں کے خاتمے کیلئے کسی بھی طرح کے سفارتی اقدامات کی حمایت کریں گے تاہم دبائو کے سامنے نہیں جھکیں گے ۔

ایرانی صدر کی تقریب حلف برداری میں عراقی صدر برہم صالح ، افغان صدر اشرف غنی،حماس کے سربراہ اسماعیل ھنیہ، پاکستانی چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی ، یورپ کے جوہری مذاکرات کار انرق مورا، روسی پارلیمنٹ ڈوما کے اسپیکر ویچسلاو والودین، آرمینیا کے وزیر اعظم نیکول پاشینیان، حزب اللہ لبنان کے نائب سربراہ شیخ نعیم قاسم، سربیا کی پارلیمنٹ کے سپیکر ایویسا ڈاچیچ، الجزائر کے وزیر اعظم ایمن بن عبدالرحمان کے نام شرکت کرنے والوں میںشامل ہیں ۔

Ebrahime Raeisi
ابراہیم رئیسی کے ساتھ شرکاء کا گروپ فوٹو

ایرانی میڈیا کے مطابق تقریب میں 80کے قریب غیر ملکی شخصیات نے شرکت کی ۔ اپنے خطاب میں رئیسی نے کہا کہ میں 8کروڑ سے زائد لوگوںکا خادم ہوں ، ان کا کہنا تھا کہ ان کی انتظامیہ قومی ہم آہنگی کا مظہرہوگی ۔

یہ بھی پڑھیں:  کیا امریکہ نئی جنگ چھیڑنے والا ہے

عراقی صدر برہم صالح نے ایران کے نو منتخب صدر سید ابراہیم رئیسی سے ملاقات کی ۔ اس موقع پر صدر مملکت نے عراقی صدر کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ایران، ایک مضبوط اور طاقتور عراق کا خواہاں ہے۔

ڈاکٹر ابراہیم رئیسی نے کہا کہ ایران نے عراق کی ارضی سالمیت اور امن و استحکام کے لئے شہید قاسم سلیمانی جیسے اپنی عزیز ترین شخصیات کا خون دینے سے بھی دریغ نہیں کیا ہے۔ اسکے علاوہ صدر مملکت سید ابراہیم رئیسی سے افغانستان کے صدر، آرمینیا اور الجزائر کے وزرائےاعظم اور آذربائیجان کی پارلیمنٹ کے سپیکر نے بھی ملاقات کر کے باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔

یاد رہے:ایرانی صدر کی تقریر کے بعد امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے کہا ہے کہ اگر صدررئیسی پابندیوں کا خاتمہ چاہتے ہیں تو ایران جلد سے جلد مذاکرات شروع کرے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں