Sindh_cabinat

سندھ کابینہ میں بڑی رد و بدل

EjazNews

وزیراعلیٰ سندھ نے مزید 4وزراء، 3مشیراور 13معاونین خصوصی کو سندھ کابینہ میں شامل کیا ہے ، گورنر سندھ عمران اسماعیل نے ایک سادہ تقریب میں نئے چار وزراء محمد ساجد جوکھیو ، گیان چندایسرانی ، سید ضیاء عباس شاہ اور جام خان شورو سے گورنر ہاؤس میں حلف لیا۔ تقریب میں وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اور صوبائی وزراء نے شرکت کی۔ چیف سیکرٹری نے تقریب میں وزیراعلیٰ سندھ نے تین مشیر منظور حسین وسان ، فیاض علی بٹ اور رسول بخش چانڈیو کو مقرر کرنے کا اعلان کیا ۔

وزراء میں نیا چہرہ ضیاء عباس شاہ ہے جو ٹنڈو الٰہیار سے ایم پی اے منتخب ہوئے ہیں جو گزشتہ 2ادوار سے صوبائی اسمبلی کے رکن رہے ہیں، وہ پی پی پی کے پرانے رہنما علی نواز شاہ رضوی کے بیٹے ہیں جو پاکستان پیپلز پارٹی کے سابق ایم پی اے ہیں،ساجد جوکھیو ، گیان چند ایسرانی اور جام خان شورو پیپلز پارٹی کی گزشتہ حکومت میں صوبائی وزراء کے طور پر خدمات انجام دے چکے ہیں۔
منظور حسین وسان پی پی پی کے سینئر ترین رہنما ہیں اور انہوں نے صوبائی حکومت میں مختلف محکموں کے وزیر کی حیثیت سے خدمات انجام دی ہیں، بشمول سندھ میں پی پی پی حکومت کے تمام آخری ادوار سمیت گیان چند بطور وزیر ایکسائز بھی خدمات انجام دے چکے ہیں اور تھانہ بولا خان ضلع جامشورو سے بلامقابلہ ایم پی اے ہیں۔ ساجد جوکھیو نے پیپلز پارٹی کے گزشتہ دور حکومت میں زکوٰ ۃو عشر کے طور پر بھی خدمات انجام دیں۔

یہ بھی پڑھیں:  8سالہ بچے پر توہین رسالتؐ کامقدمہ درج نہیں ہوا، برطانوی اخبار کی خبر غلط ہے:طاہر اشرفی

وزراء کو دوبارہ تفویض کردہ محکمے مندرجہ ذیل ہیں:
اسماعیل راہو کو یونیورسٹیز اینڈ بورڈز ، ماحولیات ، موسمیاتی تبدیلی اور ساحلی ترقی جبکہ مخدوم محبوب کو ریونیو اور سعید غنی کو محکمہ محنت اور اطلاعات دیئے گئے ہیں، سید سردار شاہ ثقافت کو سیاحت ، نوادرات اور تعلیم کے محکمے دیئے گئے ، تیمور تالپور کو جنگلات کا محکمہ دیا گیا ہے ، سید ناصر شاہ کو محکمہ بلدیات، ہاؤسنگ اینڈ ٹاؤن پلاننگ اور پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ، جام اکرام اللہ دھاریجو کو انڈسٹریز اینڈ کوآپریشن ، ساجد جوکھیو کو سوشل ویلفیئر ، گیان چند ایسرانی کو اقلیتی امور ، ضیاء عباس شاہ کو ورکس اینڈ سروسز ، جام خان شورو کو محکمہ آبپاشی کے قلمدان دیئے گئے ہیں۔

مشیر ان اور انکے محکمے:
وزیراعلیٰ سندھ نے مرتضیٰ وہاب کو حکومت کے ترجمان اور مشیر قانون کے قلمدان مختص کئے گئے ہیں، اعجاز جکھرانی کو جیل خانہ جات، منظور وسان کو زراعت ، فیاض بٹ کو زکوۃ عشر اور مذہبی امور اور بحالی اور رسول بخش چانڈیو کو ری ہبلی ٹیشن اینڈ ریلیف دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  سندھ میں جمعہ سے پھر پابندیاں عائد کرنے کا فیصلہ

معاونین خصوصی:
وزیراعلیٰ سندھ نے معاونین خصوصی کو مندرجہ ذیل محکمے مختص کئے ہیں۔ وقار مہدی پولیٹکل افیئرز اینڈ سی ایم آئی ٹی ، قاسم نوید کو محکمہ انویسٹمنٹ اور پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ پراجیکٹس ، بنگل خان مہر کووائلڈ لائف اینڈ انکوائریز اینڈ اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ ، تنزیلہ ام حبیبہ کو انفارمیشن ٹیکنالوجی ڈپارٹمنٹ ، لیاقت علی اسکانی کو کچی آبادیز ؍ہیومن سیٹلمنٹ ڈیپارٹمنٹ ، سادھومل سریندر ولاسی کو ہیومن رائٹس ڈپارٹمنٹ، صادق علی میمن کو ڈس ایبلٹی پرسن ڈیپارٹمنٹ ، پارس ڈیرو کو یوتھ افیئرز ڈیپارٹمنٹ ، علی احمد جان کو ضلع غربی سے متعلق معاملات ، محمد آصف خان کو ضلع کیماڑی سے متعلق معاملات ، سلمان عبداللہ مراد کو ضلع ملیر سے متعلق معاملات ، اقبال ساند کو ضلع شرقی سے متعلق معاملات ، صغیر قریشی کو حیدرآباد سٹی سے متعلق معاملات اور سکھر سٹی سے متعلق معاملات کیلئے ارسلان اسلام شیخ کو مقرر کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں