Asla_Dealer

پنجاب کے 220 اسلحہ ڈیلروں کو کمپیوٹرائزیشن کیلئے 2ہفتے کی ڈیڈ لائن

EjazNews

محکمہ داخلہ پنجاب نے صوبے کے 220سے زائد اسلحہ ڈیلروں کو کمپیوٹرائزیشن کے لئے 2ہفتے کی ڈیڈ لائن سےدے دی ہے جس کے بعد ان کے لائسنس منسوخ کرکے ان شورومز سیل کر دئیے جائیں گے۔

پنجاب میں دہشت گردی سمیت دیگر سنگین جرائم میں ملوث افراد کسی ڈیلر سے اب اسلحہ اور گولیاں نہیں خرید سکیں گے۔پنجاب میں سمگلڈ اسلحہ کی خرید و فروخت روکنے اور اسلحہ ڈیلروں کی کمپیوٹرائزیشن کے لئے پی ٹی سی ایل نے مخصوص ڈی ایس ایل انٹرنیٹ لائنز بچھائی ہیں جس سے سسٹم ہیک نہیں ہوسکے گا۔

محکمہ داخلہ اور نادرا کی طرف سے اسلحہ ڈیلروں کے پاس لگائے گئے کمپیوٹرائزیشن سسٹم کے ذریعے سب سے پہلے اسلحہ اور گولیاں خریدنے آنے والے کے شناختی کارڈ کی تفصیلات کی تصدیق کی جائیگی۔ ٹرانسپورٹیشن لائسنس کے بغیر اسلحہ کسی دوسرے ملک یا صوب ے سے نہیں منگوایا جاسکے گا ۔

دستاویزات کے مطابق اب ڈیلر کی طرف سے بیچے جانیوالے ہراسلحےاور گولیوں کی فروخت کی ٹرانزیکشن کی محکمہ داخلہ برا ہ راست اپنےکمپیورٹرز مانیٹرنگ کرسکے گا۔ہر گولی اور بندوق کی کمپیوٹرائزڈ انٹری ہوگی۔ اس اقدام سےصوبے میں غیر قانونی اسلحہ کی خریدوٖفروخت بند ہو جائے گی اور دہشت گردی کو روکنے میں مدد ملے گی۔

یہ بھی پڑھیں:  نامزد صوبائی وزیر اسد کھوکھر کے بھائی کا قتل : سنگین انکشافات سامنے آنے لگے

لاہور کے 50سے زائد اسلحہ ڈیلروں کے شورومز پر پی ٹی سی ایل نے خصوصی ڈی ایس ایل انٹرنیٹ لائنز فراہم کر دی ہیں۔ پنجاب آرمز رولز 2017ءکے مطابق کمپیوٹرائزیشن اور ڈی ایس ایل لائنز کے اخراجات اسلحہ ڈیلر برداشت کررہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں