kashmir hot issue

مقبوضہ کشمیر جب چھائونی بن گیا

EjazNews

بھارتی صدر رام ناتھ کووند مقبوضہ کشمیر کے دورے پر پیر کے روز سرینگر پہنچے۔ انکی آمد پر کشمیر یوں نے وادی میں مکمل ہڑتال کی اور کاروبار زندگی معطل کرکے بھارتی مظالم کیخلاف اپنا احتجاج ریکارڈ کرایا۔بھارتی قابض فورسز نے سکیورٹی کے نام پرسرینگر کومکمل طور پر فوجی چھائونی میں تبدیل کردیا۔

رام ناتھ کووند کے دورہ کا ڈرامہ عالمی برادری کو مقبوضہ وادی میں حالات معمول پر ہونے کا تاثر دینے کیلئے رچایا گیا

اس سے  قبل مقبوضہ وادی کے اضلاع کولگام اوربانڈی پورہ میں گزشتہ دنوں 4نوجوانوں کی شہادت پر بھی ہڑتال کی گئی جبکہ شہید نوجوانوں کی لاشیں تدفین کیلئے لواحقین کو نہ مل سکیں۔

بھارتی صدر کی آمد پر ہڑتال کی کال کل جماعتی حریت کانفرنس نے دی تھی ۔ حریت کانفرنس نے ایک بیان میں آزادی پسند کشمیریوں سے اپیل کی تھی کہ بھارتی صدر کی کشمیر آمد پر سول کرفیو نافذ کریں کیونکہ بھارتی صدر کا دورہ کشمیریوں کے رستے ہوئے زخموں پرنمک پاشی کے مترادف ہے۔ رام ناتھ کووند کے دورہ کا ڈرامہ عالمی برادری کو مقبوضہ علاقے میں سب کچھ معمول کے مطابق ہونے کا تاثردینے کیلئے رچایا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  چین کو پہلے ہی کہا تھا اگر ڈیل نہ کی تو بہت نقصان ہوگا:ڈونلڈ ٹرمپ

قائد تحریک آزادی جموں کشمیر سید علی گیلانی نے بھارتی صدر کے دورہ مقبوضہ کشمیرکے خلاف احتجاج کی کال دیتے ہوئے کشمیری عوام سے اپیل کی تھی کہ وہ اس دورے کے خلاف بھرپور احتجاج ریکارڈ کراکے قابض حکمرانوں اور دنیا کو حقیقت کا آئینہ دکھائیں۔ ایک ٹویٹ میں سیدعلی گیلانی نے کہاکہ ریاست جموں و کشمیر پر بھارت کا جبری قبضہ ہے اور ہمارا تعلق قابض اور مقبوضہ کا ہے جس میں کسی خیر سگالی کے کسی جذبے کیلئے دونوں اطراف سے کوئی گنجائش نہیں۔ بانڈی پورہ بازار میں ہر طرح کی کاروباری و تجارتی سرگرمیاں بند رہیں ۔لگام اوربانڈی پورہ میں انٹر نٹ سروس بند کر دی گئی ہے ۔جبکہ جنوبی کشمیر میں نامعلوم نوجوان نے پولیس اہلکار سے اسکی سروس رائفل چھین لی جس کے بعد فورسز نے علاقہ کو محاصرے میں لے لیا۔

کل جماعتی حریت کانفرنس کی آزادکشمیر شاخ نے اسلام آباد سے جاری ایک بیان میں کہاکہ بھارت اپنی فوج کے ذریعے مقبوضہ جموں وکشمیر میں بے گناہ کشمیریوں پر طاقت کا وحشیانہ استعمال کررہاہے۔ بیان میں کہاگیا کہ بھارتی بربریت کے نتیجے میں ایک لاکھ سے زیادہ بے گناہ کشمیری شہید اور لاکھوں دیگر زخمی ہوچکے ہیں۔ بیان میں کہاگیا کہ اس صورتحال میں بھارتی صدر کے دورہ غیر قانونی زیر تسلط جموں وکشمیر کا مقصد تنازعہ کشمیر سے توجہ ہٹانا اور عالمی برادری کو گمراہ کرنا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  افغانستان کی سرزمین کسی بھی ملک کے خلاف استعمال نہیں کی جائے گی:طالبان

اپنا تبصرہ بھیجیں