Talha

طلحہ ہار کے باوجو د دل جیتنے میں کامیاب، ایرانی نرس نے گولڈ میڈل جیت لیا

EjazNews

ایران کے 41 سالہ نرس جاوید فروغی نے ٹوکیو میں ہونے والے اولمپکس میں شوٹنگ مقابلہ میں فرسٹ گولڈ میڈل جیت کو ایک نیا ریکارڈ قائم کردیا یہ ایران کے لئے ایک تاریخی میڈل ہے فروغی آئی آرجی سی کے بغیات اللہ ہسپتال سے 2010 میں شوٹنگ کیرئر شروع کیا بعد ازاں اسے نیشنل ٹیم میں مقابلہ کی دعوت دی گئی۔

جبکہ پاکستانی غلام جوزف نے 10 میٹر ائیر پستول اولمپک کوالیفکیشن میچ میں نویں پوزیشن حاصل کی، قانون کے مطابق شروع کے 8 شوٹرز فائنل میں داخل ہوتے ہیں لیکن غلام جوزف اس دن بدقسمت رہے اور ان کا 578/600 اسکور کے ساتھ ساتویں اور آٹھویں نمبر والے کھلاڑیوں کے ساتھ ٹائی ہوگیا اور وہ معمولی سے فرق سے باہر ہوگئے۔

دوسری جانب ماحور شہزاد کو، جو ایک قابل کھلاڑی اور سابقہ قومی چمپئن بھی ہیں، آکانے کے ہاتھوں 3-21 اور 8-21 سے شکست ہوئی۔

جبکہ 2 سالہ طلحہ 45 سال میں اولمپکس میں شرکت کرنے والے پہلے پاکستانی ویٹ لفٹر ہیں، وہ اولمپکس کے لیے براہ راست کوالیفائی نہیں کر سکے تھے اور انہیں کوٹہ سسٹم کے تحت اولمپکس میں شامل کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستان کی زمبابوے کیخلاف پہلی جیت

ٹوکیو اولمپکس 2020 میں اتوار کے دن 67 کلوگرام کیٹگری کے لیے مردوں کے مقابلے ہوئے جس میں گوجرانوالہ سے تعلق رکھنے والے طلحہ طالب نے بھی حصہ لیا۔
پاکستانی ویٹ لفٹر طلحہ طالب نے 150 کلوگرام وزن اٹھایا اور پھر وہ خالق کائنات اللہ رب العزت کا شکر ادا کرنے کے لیے اسٹیج پر ہی سجدہ ریز ہو گئے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر طلحہ طالب کی سجدہ ریز ویڈیو وائرل ہو رہی ہے جس پر مبصرین کا کہنا ہے کہ مقامی جم میں تربیت حاصل کرنے کے بعد نوجوان ویٹ لفٹر کی یہ کامیابی بڑی ہے۔

گوجرانوالہ سے تعلق رکھنے والے ویٹ لفٹر کو نہ تو پروفیشنل تربیت دی گئی اور نہ ہی انہیں ضروری بنیادی سہولتوں کی فراہمی یقینی بنائی گئی مگر اس کے باوجود عالمی سٹیج پر ان کی یہ کامیابی بیشک صرف ان کی لگن اور دعاؤں کا نتیجہ ہی قرار دی جاسکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  انگلینڈ کی تیسرے ایک روزہ میچ میں بھی جیت، تینوں میچ جیت لیے

اپنا تبصرہ بھیجیں