pegasus

بھارتی جاسوسی کی تحقیقات کیلئے ذمہ داریاں تفویض کر دی گئیں

EjazNews

اسرائیل کے جاسوسی آلات کے ذریعے بھارت کی طرف سے پاکستانی سیاستدانوں کے ٹیلی فون ٹیپنگ اور ان کی نگرانی کی کوششوں کی تحقیقات کیلئے وزیر اعظم نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی ، وزیر داخلہ شیخ رشید احمد اور وزیر اطلاعات فواد چوہدری کو ذمے داریاں تفویض کی ہیں کہ دشمن کی جاسوس سرگرمیوں سے متعلق حقائق جاننے کیلئے فوری کارروائی کریں ، اس ضمن میں تمام متعلقہ اداروں کو چوکس کر دیا گیا ہے اور معلومات جمع کی جارہی ہیں

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے بتایا کہ ‘ہم ہیکنگ کی تفصیلات کا انتظار کر رہے ہیں۔

وزیر اطلاعات سے جب سوال کیا گیا کہ کیا یہ معاملہ بھارت کے ساتھ اٹھایا جائے گا جس پر انہوں نے جواب دیا کہ جب تفصیلات موصول ہوجائیں گی تو معاملہ متعلقہ فورمز پر اٹھایا جائے گا۔

فواد چوہدری نے کہا تھا کہ ‘اس رپورٹ پر انتہائی تشویش ہے، مودی حکومت کی غیر اخلاقی پالیسیوں سے بھارت اور پورا خطہ خطرناک حد تک پولرائز ہوگیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  25مارچ 1992جب ہم ورلڈ کپ جیتے

غیر ملکی میڈیا رپورٹس میں کہا گیا کہ بھارت ان ممالک میں شامل ہے جو اسرائیل کی کمپنی کے جاسوسی کے سافٹ ویئر کا استعمال کر رہا تھا، جس کے ذریعے دنیا بھر میں صحافیوں، حکومتی عہدیداران اور انسانی حقوق کے کارکنوں کے اسمارٹ فونز کی کامیاب نگرانی کی جاتی رہی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں