Danish_sidiqi

رائٹرز کے انعام یافتہ فوٹو گرافر دانش صدیقی افغانستان میں ہلاک

EjazNews

غیر ملکی میڈیاکی رپورٹ کے مطابق عہدیدار نے بتایا کہ افغان اسپیشل فورس سپین بولدک کے مرکزی بازار کے علاقے پر دوبارہ قبضہ کرنے کے لیے لڑ رہے تھے کہ دانش صدیقی اور ایک سینئر افغان اہلکار مارے گئے جو ان کے مطابق طالبان کی فائرنگ سے ہلاک ہوئے۔

دانش صدیقی رواں ہفتے کے آغاز سے ہی جنوبی صوبہ قندھار میں مقیم افغان اسپیشل فورسز کے ساتھ بطور صحافی کام کر رہے تھے اور وہ افغان کمانڈوز اور طالبان جنگجوؤں کے مابین لڑائی کے بارے میں رپورٹنگ کر رہے تھے۔

دانش صدیقی نے نیوز ایجنسی کو بتایا تھا کہ جھڑپ کی رپورٹنگ کرتے ہوئے ایک چھرے سے ان کا بازو زخمی ہوگیا ہے اور جب طالبان سپین بولدک میں لڑائی کے دوران پیچھے ہٹے تو ان کا علاج کیا گیا اور وہ صحت یاب ہو رہے تھے۔

افغان کمانڈر نے بتایا کہ دانش صدیقی دکانداروں سے گفتگو کر رہے تھے کہ طالبان نے دوبارہ حملہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں:  جاپان میں زلزلے کے بعدسونامی کی وارننگ

دانش صدیقی، رائٹرز کی اس فوٹوگرافرز کی ٹیم کا حصہ تھے جس نے روہنگیا پناہ گزینوں کے بحران پر تصاویر پیش کرنے پر فیچر فوٹو گرافی کا 2018 پلٹزر ایوارڈ جیتا تھا۔

وہ 2010 کے بعد سے رائٹرز کے ایک فوٹو گرافر کی حیثیت سے کام کر رہے تھے اور انہوں نے افغانستان اور عراق کی جنگوں، روہنگیا پناہ گزینوں کے بحران، ہانگ کانگ کے مظاہروں اور نیپال کے زلزلوں پر رپورٹنگ کی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں