syed_murad_ali_shah

سندھ میں جمعہ سے پھر پابندیاں عائد کرنے کا فیصلہ

EjazNews

وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی صدارت میں کورونا وائرس کی صوبائی ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا۔اجلاس میں صوبائی وزرا ناصر شاہ، اکرام اللہ دھاریجو، پارلیمانی سیکرٹری قاسم سومرو، چیف سیکرٹری، آئی جی پولیس، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ، کمشنر کراچی، صوبائی سیکرٹریز، ڈبلیو ایچ او کی نمائندہ ڈاکٹر سارہ، ڈاکٹر قیصر، کور فائیو اور رینجرز کے نمائندے شریک ہوئے۔

اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ صوبے میں نئے کیسز کی شرح 7.4 فیصد ہوگئی ہے۔

وزیر اعلیٰ نے کہا کہ 5 فیصد سے کووڈ کیسز بڑھے تو یہ خطرناک صورتحال ہے۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ منگل کو 16 ہزار 262 ٹیسٹ کیے گئے جس میں ایک ہزار 201 کیسز سامنے آئے اور 13 جولائی کو کراچی میں نئے کیسز کی شرح 17.11 فیصد رہی۔

ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق کراچی شرقی میں 21 فیصد، جنوبی میں 15 فیصد، وسطی میں 12 اور کورنگی میں 8 فیصد کیسز ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  پٹرول کی قیمتوں میں ایک مرتبہ پھر اضافہ کر دیا گیا

اس موقع پر وزیراعلیٰ مراد علی شاہ نے کہا کہ کراچی میں صورتحال کافی خراب ہے۔

اجلاس کو مزید بتایا گیا کہ سندھ میں 12 جولائی تک کورونا کی مختلف اقسام کے 356 کیسز سامنے آئے ہیں جن میں برطانوی قسم کے 92، جنوبی افریقی قسم کے 162، برازیلی قسم کے 29، بھارتی قسم کے 66، پی وی کے 3 اور وائلڈ ٹائپ کا ایک کیس شامل ہیں۔

اجلاس میں صوبے بالخصوص کراچی میں کورونا کی خراب ہوتی صورتحال کے باعث ریسٹورنٹس میں انڈور کھانے کو کل رات سے بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

اجلاس میں پہلی سے آٹھویں جماعت تک کی کلاسز جمعہ سے بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا، جبکہ نویں اور اس سے زائد کلاسز کے تعلیمی ادارے سوائے امتحانات کے بند ہوجائیں گے۔

تفریحی پارکس، واٹر پارکس، سی ویو، ہاکس بے، کنجھر جھیل، سینما، انڈور جمز اور انڈور کھیل جمعہ سے بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  انفارمیشن ٹیکنالوکی برآمدات 2ارب ڈالر سے بڑھ گئیں

اپنا تبصرہ بھیجیں