گیرفتار

پارلیمنٹ ہاﺅس کے سامنے سے مسلح شخص گرفتار

EjazNews

اسلام آباد میں پولیس نے پارلیمنٹ ہاوس کے سامنے سے ایک مسلح شخص کو گرفتار کیا ہے۔

سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ شلوار قمیض پہنے ایک شخص ہاتھ میں پستول پکڑے پارلیمنٹ ہاوس کے سامنے ڈی چوک میں سڑک کے درمیان کھڑا ہے جس سے کچھ فاصلے پر پولیس اہلکار کھڑے ہیں۔

مسلح شخص کو بعد ازاں گرفتار کر کے تھانہ سیکرٹریٹ منتقل کیا گیا۔

ابتدائی معلومات کے مطابق حراست میں لیے گئے مسلح شخص کا ذہنی توازن درست نہیں۔زیر حراست شخص کے پاس کسی قسم کی کوئی شناختی دستاویز نہیں اور ایس پی سٹی ان سے خود پوچھ گچھکی۔

جب وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید سے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران سوال کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ گرفتار ہونے والے شخص کے پستول میں گولیاں نہیں تھیں۔

یاد رہے : 2013 میں بھی سکندر نامی ایک شخص نے ایوان صدر اور پارلیمنٹ سے ایک کلومیٹر کے فاصلے پر فائرنگ کرنی شروع کر دی تھی۔ سکندر نامی شخص کے ساتھ اس کی بیوی اور بیٹی بھی تھی۔ کئی گھنٹوں کے تناو کے بعد پولیس نے انہیں گولی مار کر زخمی کر دیا تھا۔ جس کے بعد ان پر انسداد دہشت گردی کی دفعہ چھ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  وفاقی وزیر علی محمد مہردل کا دورہ پڑنے سے وفات پا گئے

اپنا تبصرہ بھیجیں