Imran khan_covid breef

ہم نہیں چاہتے کہ عید پر پابندیاں لگائیں اور اس کا مزہ خراب ہو،احتیاط کریں

EjazNews

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی انڈین قسم کی وجہ سے خطرہ ہے، عام ماسک پہنیں اور عید پر احتیاطی تدابیر اختیار کریں تاکہ کورونا نہ پھیلے۔

جمعرات کو ملک میں کورونا کی صورت حال پر اظہار خیال کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ اس وقت کورونا کی انڈین قسم مسئلہ بنی ہوئی ہے۔

ان کے مطابق یہ کورونا کی یہ قسم افغانستان، انڈونیشیا اور دوسرے ملکوں تک بھی پہنچ چکی ہے۔

این سی او سی کے سربراہ اور وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا ہے کہ اسلام آباد ہی نہیں ملک بھر میں کورونا کیسز بڑھ رہے ہیں، تاہم ملک گیر لاک ڈاؤن کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔

جمعرات کو اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم مکمل لاک ڈاؤن نہیں کریں گے بلکہ سمارٹ لاک ڈاؤن کی طرف جائیں گے۔

ہم نہیں چاہتے کہ عید پر پابندیاں لگائیں اور اس کا مزہ خراب ہو، جولائی میں کورونا کی چوتھی لہر آنے کا خدشہ ظاہر کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  ثناء میر 15سالہ کیرئیر کے بعد ریٹائرڈ ہو گئیں

اسد عمر کا کہنا تھا کہ ملک میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز پر وزیراعظم عمران خان کو بریفنگ دی جائے گی۔

دی اکانومسٹ کی رپورٹ کا تذکرہ کرتے ہوئے وفاقی وزیر منصوبہ بندی نے کہا کہ میں اکانومسٹ کی رپورٹ پر خوش نہیں ہوں، پاکستان میں پہلے نمبر پر آنے کی صلاحیت ہے کیوں نہیں آیا۔

انہوں نے پاکستان کے زیرانتظام کشمیر کے حوالے سے کہا کہ وہاں انتخابی مہم کے دوران کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزیوں پر الیکشن کمیشن کو خط لکھا ہے۔

خط کے ساتھ کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزیوں کی تصاویر لگائی ہیں، الیکشن کمیشن کو لکھا ہے کہ وہ ان خلاف ورزیوں کا نوٹس لے۔

اسد عمر کے مطابق ’این سی او سی نے کشمیر میں دو ماہ کے لیے الیکشن موخر کرنے کی سفارش کی تھی، ہم چاہتے تھے کہ ان دو ماہ کے دوران زیادہ سے زیادہ لوگوں کو ویکسین لگ جاتی۔

یہ بھی پڑھیں:  خیبرپختونخوا میں جنگلات کے رقبے میں 4فیصد اضافہ ہوگیا: وزیراعظم

واضح رہے کہ پاکستان میں کوورنا وائرس کے 9 لاکھ 67 ہزار 633 مصدقہ کیسز سامنے آچکے ہیں جن میں سے 34 ہزار 531 فعال کیسز ہیں۔
ملک میں کورونا کی وبا سے اب تک 22 ہزار 493 ہلاکتیں ہوئی ہیں جبکہ 9 لاکھ 10 ہزار 609 افراد صحت یاب ہوئے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں