fawad+khusro

نئی پالیسی سے گاڑیوں کی قیمتیں کم کریں گے

EjazNews

اسلام آباد میں وفاقی وزیر اطلاعات کو نشریات فواد چوہدری کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے خسرو بختیار نے کہا کہ پچھلے سال 4 لاکھ 15 ہزار گاڑیاں بنیں، ہم چاہتے ہیں کہ طلب بڑھائیں کیونکہ یہ سب سے بڑا سیکٹر ہے، گاڑیوں کی قیمتیں کم ہوتی ہیں تو طلب بڑھتی ہے، تو ہم نے گاڑیوں پر ڈیوٹی کم کردی ہے، جس کے بعد 660 سی سی کی گاڑیوں کی قیمت ایک لاکھ 50 ہزار روپے تک کم ہوں گی۔

انہوں نے کہا کہ کلٹس، سٹی اور ٹویوٹا گاڑیوں کی قیمتیں کم ہوں گی اور طلب میں اضافہ ہوگا جبکہ طلب بڑھنے سے 3 لاکھ نئی نوکریاں پیدا ہوں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ اس سال گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کو ملا کر 3 لاکھ 75 ہزار نوکریاں پیدا ہوں گی، ہم نے گاڑیوں کی اپ فرنٹ پیمنٹ 20 فیصد کردی ہے، آئندہ سال اس کی اقساط کو بھی کم کر دیں گے۔

یہ بھی پڑھیں:  حارث رؤف نے آسٹریلوی ٹی ٹونٹی میں پاکستان کا نام روشن کر دیا

وفاقی وزیر نے کہا کہ یہ بہت بڑا سیکٹر ہے، اس کو ہمیں برآمد کی طرف لے کر جانا ہے، نئی پالیسی جو آرہی وہ برآمد اور مینوفیکچرنگ کی بنیاد پر بنائی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہماری توجہ یہ ہے کہ ہماری گاڑیوں کو بہتر کیا جائے، پاکستان میں سب گاڑیوں کی قیمتیں کم ہوگئی ہیں، چھوٹی گاڑی پر میری گاڑی سکیم کے تحت ہماری خاص توجہ ہے، ہمارا ہدف ہے کہ پاکستان میں 5 لاکھ گاڑیاں بنیں گی، یہ بل کل کابینہ میں منظور ہوا ہے اور کوشش ہے کہ آر او آجائے تو ہم نئی قیمتوں کا اطلاق کریں گے، جبکہ ہم آٹو سیکٹر میں درآمد کی بھی اجازت دیں گے۔

وفاقی وزیر فواد چوہدری نے کہا کہ ہم نے زراعت کی ترقی کے لیے کام کیا اور اپنے قرضوں میں کمی لے کر آئے ہیں، ہم آج نئی خوشخبری لے کر سامنے آئے ہیں جس میں ہم گاڑیوں کی قیمت میں کمی کریں گے، ہمارے جو جوان پہلی بار گاڑی لینا چاہتے ہیں ان کے لیے نئی خوشخبری لائے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف سمیت دیگر مسلم لیگی رہنماﺅں کیخلاف مقدمہ درج

اپنا تبصرہ بھیجیں