kpk_Budget

پہلے ہی دن صوبائی حکومت نے منظور شدہ ترقیاتی منصوبوں کیلئے 100فیصد فنڈز جاری کردئیے

EjazNews

 خیبر پختونخوا کے وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑا اور کامران بنگش نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ تیمور جھگڑا یکم جولائی کو مالی سال کے پہلے ہی دن صوبائی حکومت نے منظور شدہ ترقیاتی منصوبوں کیلئے 100فیصد فنڈز جاری کردئیے ہیں جو منصوبے منظوری کے مراحل میں ہیں ان کی منظوری کے بعد فنڈز کا اجرا ہوگا،

گزشتہ مالی سال کے دوران محکموں کی جانب سے ایک پیسہ بھی سرنڈرنہیں کیاگیا، مالی سال2020-21کےاصل اعداداوشمارہم رپورٹس فائنل ہونے پرجاری کریں گے ، 210ارب کے صوبائی پروگرام کے فنڈزجاری کردئیے،اس اقدام سے جون ازم کاخاتمہ ہوگا،یہ انقلابی قدم ہے جس سے پورے سال فنڈزاستعمال ہوں گے جومحکمے فنڈزاستعمال نہیں کرپائیں گے ان کے فنڈزدیگرمحکموں کومنتقل کئے جائیں گے،

وزیر خزانہ نے کہاکہ ہم شفافیت اورفعالیت کیلئے کام کررہے ہیں تاکہ عوام کی تقدیربدل جائے،وزیر اعظم عمران خان نے بجلی منافع بقایاجات کے حوالے سے صوبہ کے عوام کیساتھ جو وعدہ کیا ہے وہ ضرور پورا ہوگا ، ماہانہ 3ارب روپے مل رہے ہیں جبکہ مرکز نے گزشتہ سال کے بقایاجات کی مدمیں 25ارب روپے جاری کردیئے ہیں،ایک سال میں ہمیں بجلی منافع کی مدمیں 47ارب ملے ہیں،

یہ بھی پڑھیں:  بروغل فیسٹیول کیا ہے؟

صوبائی وزیر خزانہ نے کہاکہ پنجاب، سندھ اور بلوچستان سے قبائلی اضلاع کی تعمیر و ترقی کیلئے این ایف سی کا تین فیصد حصہ لینے کیلئے معاملہ مشترکہ مفادات کونسل میں اٹھائیں گے، تیمور جھگڑا نے کہاکہ پنشن کی ادائیگی کیلئے بہتر اچھاآپشن تلاش کررہے ہیں کیونکہ پنشن کے اخراجات پندرہ سال میں سوگنابڑھ گئے ہیں اور رواں سال اس مد میں 100ارب کی ادائیگی کی جائیگی ،

انہوں نے کہاکہ انڈیامیں پنشن ادائیگی کنٹری بیوٹری فنڈسے جاتی ہے،پنشن کومحدودکردیاہے جوبچوں،بیوہ اوروالدین کوہی ملے گی، معاون اطلاعات کامران بنگش نے کہاکہ خیبرپختونخواحکومت وفاق کیساتھ صوبائی مسائل اٹھارہی ہے،ہم مالی نظم وضبط کیلئے اصلاحات کررہے ہیں،ہم بے تکی سیاست کرتے ہیں نہ کسی پرکیچڑ اچھالتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں