Dileep Kumar

دلیپ کمار ایک مرتبہ پھر ہسپتال میں داخل

EjazNews

دلیپ کمار ایک دہائی سے ہر طرح کی تقریبات سے دور ہیں اور زائد العمری و بیماری کی وجہ سے گھر پر ہی رہتے ہیں۔

پشاور میں 11 دسمبر 1922 کو پیدا ہونے والے دلیپ کمار کا اصل نام یوسف خان ہے اور انہوں نے 1944 میں 22 سال کی عمر میں فلم ‘جوار بھاٹا سے فلمی دنیا میں قدم رکھا۔

وہ انداز، داغ، رام اور شام، نیا دور، مدھومتی ،دیوداس اور آدمی جیسی کئی سپر ہٹ فلموں کا حصہ رہے ہیں۔

انہوں نے بہت سی فلموں میں مختلف قسم کے کردار ادا کیے لیکن ‘مغل اعظم میں ان کی رومانوی اداکاری اور ‘رام اور شام میں ان کے کردار کو آج بھی بہت پسند کیا جاتا ہے۔

ان کی آخری فلم قلعہ 1998 میں ریلیز ہوئی تھی -دلیپ کمار کو 1991 میں پدمابھوشن، 1994 میں دادا صاحب پھالکے اور 2015 میں پدماوی بھوشن ایوارڈ سے نوازا جا چکا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستان اور انڈین فنکاروں پر مشتمل پنجابی فلم

دلیپ کو ایک ہفتے تک ہسپتال میں رکھے جانے کے بعد ان کے پھیپھڑوں سے پانی نکال کر انہیں 11 جون کو گھر جانے کی اجازت دی گئی تھی۔

تاہم اب ایک مرتبہ پھر انہیں سانس لینے میں تکلیف کے باعث ہسپتال منتقل کرکے آئی سی یو میں داخل کردیا گیا۔

دلیپ کمار کو 30 جون کو دوبارہ سانس میں تکلیف کے باعث ممبئی کے ہندوجا ہسپتال منتقل کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق دلیپ کمار کو آئی سی یو میں رکھا گیا ہے مگر ان کی حالت خطرے سے باہر ہے اور ان کی طبیعت کو مانیٹر کیا جا رہا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ زائد العری کے باعث اداکار کو گھر میں سانس لینے میں مشکلات پیش آ رہی تھیں، جس کی وجہ سے ان کے اہل خانہ نے انہیں گھر کے بجائے ہسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ کیا۔

رپورٹ کے مطابق دلیپ کمار کو وہی پرانا طبی مسئلہ درپیش ہے اور گھبرانے کی کوئی بات نہیں، ان کی صحت کی مانیٹرنگ کے بعد ان کا علاج شروع کردیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  منشا پاشا اور جبران ناصر رشتہ ازدواج میں منسلک ہو گئے

دلیپ کمار کو گزشتہ شب ہی ہندوجا ہسپتال منتقل کیا گیا تھا، انہیں ایک مرتبہ پھر سانس لینے میں مشکلات کی شکایت تھی۔

رپورٹ کے مطابق لیجنڈری اداکار کو کورونا فری آئی سی یو وارڈ میں رکھا گیا ہے، جہاں ان کی طبیعت بہتر بتائی جا رہی ہے۔

دلیپ کمار کی تازہ صحت سے متعلق ان کے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے 30 جون کی صبح تک کوئی ٹوئٹ نہیں کی گئی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں