Sindh Essambly

پی ٹی آئی اراکین نے گیٹ پرچڑھ کر سندھ حکومت کیخلاف شدید نعرے بازی کی

EjazNews

سندھ اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کرنے کیلئے تحریک انصاف کے ارکان جنازے کے بعد ڈھول باجے لے کر آگئے،پابندی والے 8ارکان بھی زبردستی ایوان میں گھس گئے،جبکہ پی ٹی آئی کے طرز احتجاج پر ایم کیوایم اور جی ڈی اے نے لاتعلقی کا اظہار کیا۔

پی ٹی آئی اراکین نے گیٹ پرچڑھ کر سندھ حکومت کیخلاف شدید نعرے بازی کی ،سکیورٹی اہلکاروں سے دھکم پیل ، سپیکر کی سیکرٹری اسمبلی کو واقعے کی تحقیقات کر کے انکوائری رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت-

سند ھ اسمبلی کی سکیورٹی بھی بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ فردوس شمیم نقوی نے احتجاجاً اسمبلی رکنیت سے استعفیٰ دینے کا اعلان کر دیا-

اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نے کہا ہے کہ اسمبلی میں جو بھی کیا احساس دلانےکیلئے کیا، اسمبلی کسی کی جاگیر نہیں عوام اور ممبران کی ہے-

دوسری جانب فواد چوہدری نے کہا ہے کہ اپوزیشن کی آواز کا گلا گھونٹا بدترین آمریت ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  پی ڈی ایم کس کو چیئرمین سینٹ بنانا چاہتی ہے؟

سپیکر سندھ اسمبلی نے ایوان میں چارپائی لانے پر پی ٹی آئی کے آٹھ ارکان پر سندھ اسمبلی میں داخلے پرپابندی لگائی تھی تاہم سپیکر کی جانب سے پابندی والے پی ٹی آئی ارکان اسمبلی نے ایوان میں داخلے کی کوشش کی، ارکان نے سندھ اسمبلی کے باہر گیٹ پرچڑھ کر سندھ حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔اس دوران ارکان نے زبردستی سندھ اسمبلی کا مین گیٹ کھلوانے کی کوشش کی جس پر سندھ اسمبلی کے گیٹ پر سکیورٹی اہلکاروں اور پی ٹی آئی اراکین میں دھکم پیل بھی ہوئی-

پی ٹی آئی ارکان نے پابندی کا شکار اراکین کو پھولوں کا ہار پہنا کر اسمبلی ہال میں داخل کرایا، اس موقع پر خواتین اراکین بھی موجود تھے۔

سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی نے گذشتہ روز سندھ اسمبلی میں چارپائی لانے والے ارکان اسمبلی کے ایوان میں داخلے پر پابندی لگائی تھی۔بعد ازاں اسپیکر نے سیکریٹری سندھ اسمبلی کو واقعے کی تحقیقات کر کے انکوائری رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کر دی ہے، سندھ اسمبلی کی سکیورٹی بھی بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  سندھ میں طوفانی بارشوں کا الرٹ جاری

اپنا تبصرہ بھیجیں