Peshawar Zalmi

دوسرا ایلیمنٹر ،اسلام آباد یونائیٹڈ کو شکست ،پشاور زلمی فائنل میں پہنچ گئی

EjazNews

ابوظہبی میں کھیلے گئے لیگ کے دوسرے ایلیمنیٹر میں پشاور زلمی نے اسلام آباد یونائیٹڈ کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے باولنگ کا فیصلہ کیا۔

اننگز کے پہلے ہی اوور میں اسلام آباد یونائیٹڈ کو اس وقت نقصان پہنچا جب کولن منرو کی جانب سے باولر کی جانب کھیلا گیا شاٹ دوسرے اینڈ پر وکٹ سے جا ٹکرایا اور باولر شعیب ملک نے رن آوٹ کی اپیل کردی۔

ٹھوس شواہد نہ ہونے کے باوجود تھرڈ امپائر نے دوسرے اینڈ پر موجود عثمان خواجہ کو آوٹ قرار دے دیا۔

اگلے ہی اوور میں محمد عرفان نے وکٹ کیپر محمد اخلاق کو چلتا کر کے اپنی ٹیم کو دوسری کامیابی دلائی۔

دو وکٹیں گرنے کے بعد کولن منرو کا ساتھ دینے برینڈن کنگ آئے اور دونوں نے 56 رنز کی اہم شراکت قائم کر کے اپنی ٹیم کی پوزیشن مستحکم کرنے کی کوشش کی۔

برینڈن کنگ نے کیچ ڈراپ ہونے کے بعد عماد بٹ کو چھکا لگایا لیکن ایک اور چھکا لگانے کی کوشش میں آل راونڈر کو وکٹ دے بیٹھے، انہوں نے 18رنز بنائے۔

یہ بھی پڑھیں:  دوسرا ٹی ٹونٹی:پاکستان کی دوسری جیت

کولن منرو اچھی فارم میں نظر آئے اور 44 رنز کی اننگز کھیلی، کامران اکمل وکٹوں کے عقب میں ان کا آسان کیچ نہ پکڑ سکے لیکن ایک گیند بعد ہی عرفان نے وکٹ کیپر کی ہی مدد سے انہیں آوٹ کردیا۔
منرو کے آوٹ ہونے کے بعد اسلام آباد یونائیٹڈ کو رنز بنانے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا اور رن ریٹ گرتا رہا، 98 کے مجموعی اسکور پر یونائیٹڈ کو پانچواں نقصان پہنچا جب افتخار احمد 10 رنز بنانے کے بعد چلتے بنے۔

شاداب خان 16 گیندیں کھیلنے کے باوجود سیٹ نہ ہو سکے اور 15 رنز بنا کر آوٹ ہو گئے جبکہ آصف علی کی اننگز بھی 8 رنز پر تمام ہوئی۔

آل راونڈر فہیم اشرف بھی مشکلات کے بھنور میں پھنسی ٹیم کو چھوڑ کر چلتے بنے اور صرف ایک رن بنایا۔

110 رنز پر 8 وکٹیں گرنے کے بعد ایسا محسوس ہوتا تھا کہ یونائیٹڈ کی اننگز جلد تمام ہو جائے گی لیکن حسن علی نے بہترین بلے بازی سے میچ کا نقشہ بدل دیا۔

یہ بھی پڑھیں:  کیا پی ایس ایل کا سیزن 6محدود شائقین کے ساتھ ہوگا؟

فاسٹ باولر نے 16 گیندوں پر 3 چھکوں اور 5 چوکوں کی مدد سے 45 رنز کی عمدہ اننگز کھیلی جبکہ محمد وسیم نے 17 رنز بنا کر ان کا بھرپور ساتھ نبھایا۔

اسلام آباد یونائیٹڈ نے آخری 4 اوورز میں 64 رنز بنائے اور مقررہ اوورز میں 174 رنز کا مجموعہ اسکور بورڈپر سجایا۔

175 رنز کے ہدف کے تعاقب میں حسن علی نے دو نوبال کے ساتھ اننگز کا آغاز کیا اور پہلے اوور میں 15 رنز دے دیے لیکن اوور کی آخری گیند پر کامران اکمل کو آوٹ کر کے غلطی کا ازالہ کردیا۔

اس کے بعد حضرت اللہ زازئی اور جوناتھن ویلز نے عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ کیا اور ذمے دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 126 رنز کی شراکت قائم کر کے یونائیٹڈ کو میچ سے باہر کردیا۔

زازئی اس اننگز کے دوران خوش قسمت رہے اور ابتدا میں ہی حسن علی کی گیند پر وکٹ کیپر کیچ لینے میں ناکام رہے جس کا انہوں نے بھرپور فائدہ اٹھایا اور فتح گر اننگز کھیلی۔

دونوں کھلاڑیوں نے نصف سنچری اسکور کی اور اسکور کو 141 تک پہنچا دیا، زازئی 4 چھکوں اور چھ چوکوں سے مزین 66 رنز بنانے کے بعد آوٹ ہوئے۔

نئے بلے باز شعیب ملک نے بھی جارحانہ انداز اپنایا اور صرف 10 گیندوں پر 32 رنز کی باری کھیل کر اپنی ٹیم کو 19 گیندوں قبل ہی فتح سے ہمکنار کرا دیا۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان دوسرا ٹیسٹ میچ، 236پر پاکستانی ٹیم آئوٹ

آسٹریلیا سے آئے جوناتھن ویلز نے 43 گیندوں پر تین چھکوں اور چھ چوکوں کی مدد سے 55 رنز کی باری کھیلی

اس میچ میں فتح کے ساتھ ہی پشاور زلمی نے فائنل میں جگہ بنا لی جہاں ان کا مقابلہ ملتان سلطانز سے ہو گا۔

حضرت اللہ زازئی کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا.

میچ کے لیے دونوں ٹیمیں ان کھلاڑیوں پر مشتمل تھیں۔
پشاور زلمی: وہاب ریاض(کپتان)، کامران اکمل، حضرت اللہ زازئی، جونو ویلز، صہیب مقصود، روومین پاول، شرفین ردرفورڈ، عماد بٹ، عمید آصف، محمد عرفان، محمد عمران۔
اسلام آباد یونائیٹڈ: شاداب خاب(کپتان)، عثمان خواجہ، کولن منرو، برینڈن کنگ، افتخار احمد، آصف علی، محمد اخلاق، حسن علی، محمد وسیم، فہیم اشرف، عاکف جاوید۔

اپنا تبصرہ بھیجیں