FATF

ایف ٹی ایف کا اجلاس شروع:پاکستان گرے لسٹ سے نکلے جائے گا ، حکام پر امید

EjazNews

منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کو روکنے کے لیے کام کرنے والے بین الاقوامی ادارے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کا اہم ورچوئل اجلاس پیرس میں شروع ہو گیا ہے۔

پانچ روزہ اجلاس میں منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کے خلاف پاکستان کی کارکردگی کا جائزہ لے کر اس کو گرے لسٹ سے نکالنے یا نہ نکالنے کا بھی فیصلہ کیا جائے گا۔

پاکستانی حکام اس بار بھی پر امید ہیں کہ ملک کی کارکردگی دیکھتے ہوئے اجلاس میں پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے کا فیصلہ ہو سکتا ہے۔

اس امید کی ایک وجہ اسی ماہ کے شروع میں ایف اے ٹی ایف کے ذیلی ادارے ایشیا پیسیفک گروپ کی طرف سے پاکستان کی ریٹنگ بہتر کرنے کا اعلان بھی ہے جس پر وفاقی وزیر برائے توانائی اور ایف اے ٹی ایف کے لیے پاکستان کے نگران وزیر حماد اظہر نے کہا تھا کہ یہ بڑے پیمانے پر قانونی اصلاحات کا نتیجہ ہے جو 14 وفاقی اور تین صوبائی قوانین میں کی گئیں۔

یہ بھی پڑھیں:  افغان پیس کانفرنس میں شرکت کیلئے سیاسی قائدین نے حامی بھر لی ہے:ترجمان دفتر خارجہ

ایشیا پیسفک گروپ کی دو جون کو جاری ہونے والی میوچل ایولیویشن کے جائزہ رپورٹ کے مطابق پاکستان نے یہ ریٹنگ ایف اے ٹی ایف کی 40 تکنیکی سفارشات میں سے 31 پر عمل درآمد کر کے حاصل کی ہے۔

سوموار کو ایک پریس کانفرنس کے دوران وفاقی وزیر حماد اظہر سے جب پوچھا گیا تو ان کا جواب یہ تھا کہ ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ سے نکلنے کے لیے پاکستان کے دو طرح کے جائزے ساتھ ساتھ چل رہے ہیں جن میں سے ایک ایشیا پیسیفک گروپ کا جائزہ ہے جس میں پاکستان نے 40 میں سے 31 نکات پر پیش رفت کرلی ہے اور دوسرا ایف اے ٹی ایف کا ایکشن پلان ہے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ حتمی فیصلے میں دونوں جائزوں کو مدنظر رکھ کر فیصلہ کیا جائے گا۔ایف اے ٹی ایف کی ویب سائٹ کے مطابق 25 جون کو اجلاس کے خاتمے کے بعد پریس کانفرنس کے ذریعے فیصلوں کا اعلان کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:  اگر جنگ ہوئی تو ہم خون کے آخری قطرے تک لڑیں گے:وزیراعظم عمران خان

اپنا تبصرہ بھیجیں