psl6-kk

کراچی کنگز کو شکست

EjazNews

babaer_azam

psl-6

ابوظہبی میں کھیلے گئے لیگ کے 16ویں میچ میں کراچی کنگز نے ٹاس جیت کر پہلے باو¿لنگ کا فیصلہ کیا تھا۔

کپتان عماد وسیم نے پہلے ہی اوور میں ٹیم کو کامیابی دلاتے ہوئے رحمٰن اللہ گرباز کو چلتا کردیا۔
اس کے بعد کپتان محمد رضوان کا ساتھ دینے صہیب مقصود آئے اور دونوں نے مل کر اسکور کو 40 تک پہنچایا لیکن اس مرحلے پر صہیب کی 14 گیندوں پر 31 رنز کی اننگز اختتام کو پہنچی۔

نئے بلے باز رلی راوسو نے بھی رضوان کا بھرپور ساتھ نبھایا اور دونوں نے تیسری وکٹ کے لیے 68 رنز جوڑے جس میں بائیں ہاتھ کے بلے باز کا حصہ 44 رنز رہا۔

108 کے مجموعی پر کراچی نے تیسری کامیابی اس وقت حاصل کی جب تھسارا پریرا نے پریرا کی قیمتی وکٹ حاصل کر لی۔
اسی اوور میں سلطانز کو ایک اور بڑا نقصان اس وقت پہنچا جب باو¿نڈری سے شاندار تھرو کے نتیجے میں کپتان رضوان پویلین واپسی پر مجبور ہو گئے۔

یہ بھی پڑھیں:  جنوبی افریقہ کیخلاف 20رکنی سکواڈ کا اعلان

ویسٹ انڈیز سے آئے شیمرون ہٹمائر کی اننگز بھی 7 رنز سے آگے نہ بڑھ سکی اور یوں سلطانز پانچویں وکٹ بھی گنوا بیٹھے۔
پانچ وکٹیں گرنے کے بعد خوشدل کا ساتھ دینے سہیل تنویر آئے اور دونوں نے اختتامی اوورز میں ذمے دارانہ بیٹنگ کرتے ہوئے اپنی ٹیم کو معقول مجموعے تک رسائی دلا دی۔

دونوں کھلاڑیوں نے 48 رنز کی شراکت قائم کی جس کی بدولت ملتان سلطانز کی ٹیم مقررہ اوورز میں 5 وکٹوں کے نقصان پر 176 رنز بنانے میں کامیاب رہی۔

کراچی کنگز نے ہدف کا تعاقب شروع کیا تو شرجیل خان صرف 4 رنز بنانے کے بعد رن آو¿ٹ ہو کر پویلین لوٹ گئے۔

نیوزی لینڈ کے مارٹن گپٹل پوری اننگز کے دوران جدوجہد کرتے نظر آئے اور 16 گیندوں پر 11 رن بنانے کے بعد عمران طاہر کی وکٹ بن گئے۔
نجیب اللہ زدران نے ایک چھکا لگا کر خطرناک عزائم ظاہر کیے لیکن وہ بھی وکٹوں کے سامنے پیڈ لانے کی پاداش میں عمران کی گیند پر آوٹ قرار پائے۔

یہ بھی پڑھیں:  تین ماہ بعد عالمی کرکٹ بحالی کی جانب بڑھی

multan

اس موقع پر کراچی کنگز نے 11.3 اوورز میں تین وکٹیں گنوا کر 77 رنز درکار تھے اور انہیں فتح کے لیے 51 گیندوں پر مزید 100 رنز درکار تھے، ایسے میں بابر اعظم کا ساتھ دینے چیڈوک والٹن آئے۔

دونوں کھلاڑیوں نے جارحانہ انداز میں بیٹنگ شروع کی اور 10 رنز سے زائد کی اوسط سے بیٹنگ کرتے ہوئے سلطانز کے تمام باو¿لرز کو آڑے ہاتھوں لینا شروع کیا۔

اس شراکت کا خاتمہ اس وقت ہوا جب والٹن 23 گیندوں پر 35 رنز بنانے کے بعد رن آو¿ٹ ہو گئے، انہوں نے بابر کے ہمراہ 77 رنز کی ساجھے داری قائم کی۔

شاندار شراکت کے خاتمے کے ساتھ ہی کراچی کنگز کی جیت کی امید بھی دم توڑ گئی اور ملتان سلطانز نے میچ میں 12 رنز سے فتح حاصل کر لی۔

میچ کے آخری اوور میں عمران خان نے تین وکٹیں حاصل کیں اور ملتان سلطانز کی ٹیم مقررہ اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 164 رنز ہی بنا سکی۔

یہ بھی پڑھیں:  فخر زمان نے بہترین کھیل پیش کیا،بابر اعظم کے اعتماد میں اضافہ ہوا:مصباح الحق

بابر اعظم نے 63 گیندوں پر 4 چھکوں اور 5 چوکوں کی مدد سے 85 رنز کی شاندار اننگز کھیلی اور ناٹ آوٹ رہے۔

رائلی روسو کو ان کی جارحانہ بیٹنگ کے لیے میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

اس فتح کے ساتھ ہی ملتان سلطانز نے 2 قیمتی پوائنٹس حاصل کر کے اپنے پوائنٹس کی مجموعی تعداد چار کرلی ہے لیکن چھ میچوں میں محض دو فتوحات کی وجہ سے وہ ٹیبل پر بدستور پانچویں نمبر پر ہی موجود ہیں جبکہ کراچی کنگز بھی دوسرے نمبر پر موجود ہے۔

میچ کے لیے دونوں ٹیمیں ان کھلاڑیوں پر مشتمل تھیں۔
کراچی کنگز: عماد وسیم(کپتان)، بابر اعظم، شرجیل خان، مارٹن گپٹل، نجیب اللہ زدران، چیڈوک والٹن، تھسارا پریرا، قاسم اکرم، وقاص مقصود، محمد عامر اور ارشد اقبال۔
ملتان سلطانز: محمد رضوان(کپتان)، رحمٰن اللہ گرباز، رائلی روسو، شیمرون ہٹمائر، صہیب مقصود، خوشدل شاہ، سہیل تنویر، عمران خان، عمران طاہر اور شاہنواز دھانی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں