Baghdad_hospital

بغداد کے ہسپتال میں گیس سلنڈر پھٹنے سے بڑے پیمانے پر ہلاکتیں

EjazNews

غیر ملکی میڈیا کے مطابق عراق کے دارالحکومت بغداد کے ہسپتال ابن الخطیب میں رات گئے آگ لگ گئی جس نے خوفناک صورتحال اختیار کر لی۔ ہسپتال میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریض زیر علاج تھے۔

آگ لگنے کی وجہ کرونا وائرس کے آئی سی یو میں آکسیجن کا سلنڈر پھٹنے سے سامنے آئی۔ ہسپتال ذرائع کے مطابق آئی سی یو میں اچانک آگ بھڑکی جس سے آکسیجن ٹینک پھٹ گیا جس سے شعلے بہت تیزی سے پھیل گئے اور زیادہ جانی نقصان ہوا۔

عراق کے وزیر اعظم نے واقعے کی فوری تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے 3 روزہ سوگ کا اعلان کر دیا۔

دوسری طرف واقعے پر عوام میں شدید غم و غصہ پھیل گیا اور عوام کی جانب سے مطالبہ کیا گیا کہ اعلیٰ سطح کے عہدے داروں کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے۔

سول ڈیفنس حکام کا کہنا تھا کہ ہسپتال میں آگ سے بچاؤ کا کوئی سسٹم موجود نہیں تھا، اور ناقص چھتوں نے شعلوں کو آگ پکڑنے والی دیگر اشیاء تک آسانی سے پھیلا دیا۔

یہ بھی پڑھیں:  متحدہ عرب امارات غیر ملکیوں کو اب مستقل شہریت مل سکے گی

عراقی سول ڈیفنس یونٹ کے سربراہ کا کہنا تھا کہ ہسپتال سے 120 مریضوں اور رشتہ داروں میں سے 90 کو بچایا گیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کم و بیش 27افراد زندگی کی بازی ہار گئے ہیں۔لیکن مختلف ذرائع اس بارے میں مختلف رائے رکھتے ہیں ۔ سی این این کے مطابق 80افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ عراقی میڈیا 30سے27افراد کی ہلاکت کی اطلاعات دے رہا ہے۔