pak_vs_ZI_scond_har

پاکستانی ٹیم 19 رنز سے دوسرا ٹی 20 میچ ہار گئی

EjazNews

پاکستان اور زمبابوے کے درمیان تین ٹی ٹوئنٹی میچز کی سیریز کا دوسرا میچ ہرارے میں کھیلا جا رہا ہے۔بابر اعظم نے ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کا فیصلہ کیا۔

زمبابوے کی جانب سے برینڈن ٹیلر اور تناشے کمن ہکاموے نے اننگز کا محتاط آغاز کیا لیکن ٹیلر صرف پانچ رنز بنا کر ہی فہیم اشرف کا شکار بن گئے۔

اس کے بعد تناشے کمن ہکاموے اور تدی وانشے مرومانی کے درمیان 31 رنز کی شراکر داری بنی جس کے بعد مرومانی اپنا پہلا میچ کھیلنے والے ارشد اقبال کا نشانہ بنے۔

تناشے کمن ہکاموے بھی 34 رنز بنا کر صبر کھو بیٹھے اور دانس عزیز کی گیند پر بابر اعظم کو کیچ تھما بیٹھے۔

زمبابوے کے چوتھے آوٹ ہونے والے کھلاڑی ریان برل تھے انہیں عثمان قادر نے آوٹ کیا۔ اس کے بعد دانش عزیز نے ویسلے مادھویرے کو بولڈ کر دیا۔

pak_vs_zim_second

زمبابوے نے 18 اوورز میں نو وکٹوں کے نقصان پر 108 رنز بنائے ہیں۔ اس پر کریز پر ریگس چکابو اور تاریسائی مساکانڈہ موجود ہیں۔

وقفے وقفے سے وکٹیں گرنے کے باعث زمبابوے کی رنز بنانے کی اوسط زیادہ نہ ہو سکی ہے اور وہ مقررہ اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 118 رنز بنا سکی۔

یہ بھی پڑھیں:  سندھ کو ہرا کر،کے پی نے فائنل تک رسائی حاصل کرلی

تناشے کموہکاموے میزبان ٹیم کے ٹاپ اسکورر رہے جنہوں نے 34 رنز کی اننگز کھیلی، ریجِس چاکبوا 18 رنز بنا کر دوسرے نمایاں بلے باز رہے۔

پاکستان کی جانب سے محمد حسنین اور دانش عزیز نے 2، 2 جبکہ فہیم اشرف، ارشد اقبال، حارث رؤف اور عثمان قادر نے ایک، ایک حاصل کی۔

کپتان بابراعظم اور محمد رضوان نے ہدف کا تعاقب سست روی سے کیا اور 5 اوورز میں محض 21 رنز بنائے۔

محمد رضوان 18 گیندوں پر 13 رنز بنا کر آؤٹ ہونے والے پہلے بلے باز تھے، جس کے بعد فخر زمان 7 گیندوں پر 2 رنز بنا سکے۔

تجربہ کار آل راؤنڈر محمد حفیظ سیریز میں ایک مرتبہ پھر ناکام رہے اور 56 کے مجموعے پر صرف 5 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے، جس کے لیے انہوں نے 10 گیندوں کا سامنا کیا۔

کپتان بابراعظم کی ہمت بھی 78 کے اسکور پر جواب دے گئی، وہ پاکستان کی جانب سے سب سے زیادہ رنز بنانے والے بلے باز تھے، انہوں نے 45 گیندوں پر 5 چوکوں کی مدد سے 41 رنز کی اننگز کھیلی۔

آصف علی کی ناکامیوں کا سلسلہ ختم نہیں ہوسکا اور وہ ایک مرتبہ پھر ٹیم کے کام نہ آسکے اور اہم وقت پر صرف ایک رن بنا کر آؤٹ ہوئے، جس کے بعد فہیم اشرف بھی دباؤ برداشت نہیں کر پائے اور 19 ویں اوور میں 87 کے اسکور پر 2 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں:  سدرن پنجاب کے ہاتھوں ناردرن کی شکست

دانش عزیز کو بھی سیریز میں مسلسل موقع دیا گیا لیکن وہ اپنی صلاحیتوں کا بھرپور اظہار نہیں کر پائے اور سست بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 24 گیندوں پر 22 رنز بنائے، جس میں صرف ایک چوکا شامل تھا۔

نوجوان بلے باز ایک ایسے موقع پر ٹیم کے لیے بہتر کارکردگی دکھانے میں ناکام رہے جب آخری اووورز میں برق رفتاری سے رنز بنانے تھے۔
پاکستان کی ٹیم آخری اوور میں 99 رنز پر ڈھیر ہوگئی اور میچ 19 رنز سے ہار گئی۔

آخری اوور میں حارث رؤف 6، عثمان قادر اور ارشد اقبال صفر پر آؤٹ ہوگئے۔

زمبابوے کی جانب سے لیوک جونگوے نے سب سے زیادہ 4 وکٹیں حاصل کیں اور ٹیم کو سیریز میں شان دار کامیابی دلائی، انہیں میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

واضح رہے کہ پاکستان کو تین ٹی ٹوئنٹی میچز کی سیریز میں 0-1 کی برتری حاصل ہے۔

پاکستان نے محمد رضوان اور باؤلرز کی عمدہ کارکردگی کی بدولت زمبابوے کو پہلے ٹی20 میچ میں 11 رنز سے شکست دی تھی۔

یہ بھی پڑھیں:  پی سی بی نے 208میچوں پر مشتمل ڈومیسٹک سیزن کا شیڈول جاری کر دیا

آج کے میچ میں دونوں ٹیموں نے اپنے سکواڈز میں تبدیلیاں کی ہیں۔

پاکستان نے حیدر علی کی جگہ ایک بار پھر آصف علی کو موقع دیا ہے۔ جبکہ محمد نواز کی جگہ فاسٹ بولر ارشد اقبال کو موقع دیا گیا ہے۔ وہ آج اپنا ڈیبیو کریں گے۔

زمبابوے نے بھی ٹیم میں دو تبدیلیاں کی ہیں۔ پیٹ درد کی وجہ سے پہلا میچ نہ کھیل پانے والے برینڈن ٹیلر کی ٹیم میں واپسی ہوئی ہے۔ وہ کپتانی کے فرائض بھی سرانجام دے گے۔

شان ولیمز کو آج کے میچ کے لیے آرام دیا گیا ہے۔ ان فارم بلے باز گریگ ارون بھی انجری کی وجہ سے ا?ج کے میچ سے باہر ہو گئے ہیں۔ ان کی جگہ تاریسائی مساکانڈہ کو موقع دیا گیا ہے۔

پاکستانی اور زمبابوے کے سکواڈ
پاکستان: بابر اعظم (کپتان)، محمد رضوان، فخر زمان، محمد حفیظ، دانش عزیز، آصف علی، فہیم اشرف، ارشد اقبال، عثمان قادر، حارث روف اور محمد حسنین۔
زمبابوے: برینڈن ٹیلر (کپتان)، تناشے کمن ہکاموے، ریان برل، ریگس چکابوا، لیوک جونگوے، ویسلے مادھویرے، تدی وانشے مرومانی، ویلنگٹن مساکاڈزا، بلیسنگ مزربانی، رچرڈ نگاروا اور تاریسائی مساکانڈہ۔