china_iran_pakistan

جوہری معاہدے میں چین کا کردار منصفانہ اور تعمیری رہا ہے:چین

EjazNews

امریکا کے سابق صدر نے ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ ختم کر دیا تھا جبکہ موجودہ صدر اس معاہدے کو بحال کرنا چاہتے ہیں۔ سابق صدر کی لگائی گئی پابندیاں ایران کیلئے بہت سی مشکلات کا پیش خیمہ ہیں۔ موجودہ صدر کے پابندیوں کے خاتمے کا عندیہ دینے کے بعد سے ایران بھی جوہری معاہدے کی بحالی کیلئے تیار ہے اس سلسلے میں چین بھی میدان میں آگیا ہے۔

چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ایران پر عائد تمام غیر قانونی پابندیوں کو ختم کر کے امریکا پھر سے عالمی جوہری معاہدے کا حصہ بن جائے تو خیرمقدم کریں گے۔

چینی میڈیاکے مطابق امریکا نےعالمی جوہری معاہدے سے یکطرفہ طور پر دستبردار اور ایران پر پابندیاں عائد کرکے خطے میں کشیدگی اور تناؤ میں اضافہ کیا ہے۔

ترجمان چینی وزارت خارجہ نے امریکا کی عالمی جوہری معاہدے میں واپسی سے متعلق ایرانی حکام اور وائٹ ہاؤس انتظامیہ کے درمیان ہونے والے مذاکرات کا خیر مقدم کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ امریکا ایران پر عائد پابندیاں ختم کرے۔

یہ بھی پڑھیں:  مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز نے دو کشمیریوں کو شہید کر دیا

ہوا چونئینگ نے مزید کہا کہ ’’جوائنٹ کمپری ہینسو پلان آف ایکشن‘‘ یعنی ایران کے عالمی جوہری معاہدے میں چین کا کردار منصفانہ اور تعمیری رہا ہے جب کہ امریکا نے معاہدے سے دستبردار ہوکر خطے میں تناؤ کا باعث بنا۔

چین نے امریکا کی جانب سے دیگر ممالک پر ایران سے تیل خریدنے کی پابندی کو بھی ختم کرنے کے مطالبے کو تیز کردیا جبکہ حال ہی میںچین اور ایران نے 25 سالہ معاہدے پر دستخط کیئے جس میں دونوں ممالک نے ان معاملات پر ایک دوسرے کی مدد کا وعدہ کیا جن پر پابندیاں عائد کر رکھی ہیں۔