Taiwan Train_crash_taiwan

تائیوان میں دہائیوں بعد بدترین حادثہ

EjazNews

میڈیا رپورٹ کے مطابق حادثہ تائیوان کے مشرقی شہر حوالیئن میں پیش آیا اور ڈرائیور بھی ہلاک ہوا، ریل میں سیاحوں کی بڑی تعداد سوار تھی اور کئی افراد ہفتہ وار چھٹیوں اور آبائی علاقوں میں روایتی ٹومب سویپنگ ڈے کی چھٹیاں منانے جا رہے تھے۔

تائیوان کے میڈیا کا کہنا تھا کہ ریل بھری ہوئی تھی اور کئی مسافر کھڑے تھے۔ریل میں 500 افراد سوار تھے اور ٹنل کے اندر پٹڑی سے اتر گئی اور یہ حادثہ دہائیوان میں دہائیوں بعد بدترین حادثہ ہے۔

جائے حادثہ کی تصاویر اور ویڈیوز میں ٹنل کے اندر پھنسے ہوئے مسافروں کو دیکھا جا سکتا ہے جہاں امدادی کارکن کام میں مصروف ہیں اور رپورٹس کے مطابق تمام مسافروں کو نکال لیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  انڈیا میں ایک مرتبہ پھر مشتبہ افراد سے یورینیم پکڑی گئی

مسافر ریل دارالحکومت تائی پے سے جنوب مشرقی شہر ٹیٹنگ جا رہی تھی جو بظاہر ایک ٹرک سے ٹکرانے کے بعد حادثے کا شکار ہوئی۔
ٹرانسپورٹ کے وزیر لن چیا لونگ نے صحافیوں کو بتایا کہ ریل میں 490 افراد سوار تھے جوابتدائی طور پر فائر حکام کی جانب سے فراہم کی گئی 350 افراد کی فہرست سے زیادہ ہے۔

شبہ ہے کہ ٹرک قابو سے باہر ہو کر مسافر ریل کے راستے میں آیا تھا اور پولیس نے ڈرائیور کو حراست میں لیا ہے۔

ایک عینی شاہد کا بھی کہنا تھا کہ ہماری ریل ٹرک سے ٹکرا گئی تھی جو پھسلتے ہوئے آرہا تھا۔