space x

خلاء میں پہلی مرتبہ عام آدمی سفر کرنے جارہے ہیں

EjazNews

جیرڈ آئیسیکمن، جن کی عمر 38 ہے، نے صحافیوں کو بتایا کہ ‘جب یہ مشن مکمل ہو جائے گا تو اس وقت لوگ اسے دیکھ کر کہیں گے کہ یہ پہلی بار تھا کہ عام لوگ خلا میں جا سکتے تھے۔

جیرڈ آئیسیکمن ای کامرس فرم شفٹ فور پیمنٹس کے بانی ہیں۔ وہ اپنے ساتھی اور سپیس ایکس کے مالک ایلون مسک کو خود اور دیگر تین افراد کو سپیس ایکس کریو ڈریگن کیپسیول میں بھیجنے کے لیے بہت بڑی رقم ادا کر رہے ہیں۔

خلا میں عام شہریوں کی پہلی پرواز کے لیے ایک کالج کے سائنس پروفیسر اور ایروسپیس ڈیٹا تجزیہ کار کا نام منتخب کر لیا گیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق ان شہری خلابازوں کو امریکی ریاست فلوریڈا میں موجود کینیڈی سپیس سینٹر سے براہ راست دکھائی جانے والی نیوز بریفنگ کے دوران متعارف کروایا گیا تھا۔

سپیس ایکس کی انسانی خلائی پرواز کے سربراہ بینجی ریڈ اور کاروباری شخصیت جیرڈ آئیسیکمن نے ان شہری خلابازوں کو متعارف کرایا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  امریکا ریاست لوزیانا میں 170 برس کا سخت ترین طوفان

رواں سال کے آخر کے لیے امریکی کمپنی سپیس ایکس نے مدار میں پرواز بھیجنے کے مشن کا منصوبہ بنایا ہے جس کے عملے میں چار افراد شامل ہوں گے۔ یہ پہلی ایسی خلائی پرواز ہوگی جس میں عام شہری خلا میں جائیں گے۔

یہ خلائی پرواز ستمبر 15 یا اس کے بعد کے لیے طے کی گئی ہے اور اس پرواز کا عملہ خلا میں تین سے چار دن گزارے گا۔

دو افراد میں سے ایک کا نام کرس سیمبروسکی ہے جن کی عمر 41 سال ہے۔ وہ امریکی فضائیہ میں کام کر چکے ہیں اور امریکی شہر سیئٹل میں ایروسپیس انڈسٹری میں کام کرتے ہیں۔ انہیں ایک قرعہ اندازی کے ذریعے چنا گیا ہے جس میں 72 ہزار افراد نے نام دیا تھا۔

ان کے علاوہ 51 سالہ سیان پراکٹر کو چنا گیا ہے جو ریاست ایریزونا کے شہر فینکس کے ساؤتھ ماؤنٹین کمیونٹی کالج میں جیو سائنس کے پروفیسر ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  دنیا کے چند منفرد ہوٹل