لہسن

لہسن جڑی نما سبزی ۔۔۔۔قیمتی نعمت ہے

EjazNews

لہسن کے بغیر شاید ہی دنیا کا کوئی کھانا تیار ہوتا ہو طاقت بخش ٹانک ہے۔ دونوں وقت کھانے کے ساتھ ان کے دو جوئے کھا لینے سے توانائی بھی آتی ہے اور جب خالی پیٹ میں لہسن جاتا ہے تو گسٹرک جوس بنتا ہے جوکھانے کو ہضم کرنے میں بہت مفید ہے۔ لہسن اور شہد کا آمیزہ کولیسٹرول جذب کرنے کی بہترین صلاحیت رکھتا ہے۔ اس کے علاوہ اسے کھانے سے بلڈ پریشر کنٹرول میں رہتا ہے۔ ہائی بلڈ پریشر نہ ہوتو لہسن کے ساتھ نمک بھی کھایا جاسکتا ہے ورنہ بغیرنمک، نزلہ، زکام، دمہ، کھانسی، سینے کا در د،حلق کی سوجن، خناق اورنمونیہ ہوتو ہرکھانے کے ساتھ لہسن کھانا مفید ہے۔

یہ جراثیم کا دشمن ہے۔ یہی نہیں یہ بہترین اینٹی سیپیک بھی ہے۔ لہسن کھانے والے شاذ ونادر ہی بیمار پڑتے ہیں۔ 40 برس کی عمر کے بعد اسے روزانہ پابندی سے ہر کھانے کے استعمال کیا جانا چاہئے کیونکہ عمر کے اس دور میں خراب کولیسٹرول زیادہ بننے لگتاہے۔

ذیابیطس کے مریضوں کے لئے بھی اسے اکسیر جانا جاتا ہے۔ یونانی طریقہ علاج اور ایلو پیتھک دونوں ہی میں ذیابیطس کے مریضوں کو ان استعمال کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے تا کہ لبلبے کی فعالیت بہتر ہوجائے۔ لہسن پیسٹ کے کیڑے بھی مارتا ہے۔ لعاب دہن پیدا کرتا ہے اور کھانا ہضم کرنے میں مدد دیتاہے۔سانس کی نالی کا بلغم اور ورم دور کرتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  ہمارے جسمانی مدافعتی نظام کی محافظ غذائیں

لہسن کے 8بہترین فوائد
بیشتر افراد اس جڑی بوٹی نما سبزی کے فوائد کے بارے میں علم نہیں رکھتے۔
1۔یہ بالوں کو گھنا بناتا ہے اور سر کی ایسی جگہ جہاں گنج پن نمایاں ہور ہا ہولہسن کچل کر لگانے سے اگنے لگتے ہیں لہسن کا رس بالوں کے گر بھی ختم کر سکتا ہے۔ اس قدرتی معالجے کے مضر اثرا کچھ بھی نہیں کیونکہ لہسن میں ایک جزو پسین کی بھر پور مقدار شامل ہے کچھ ایسی ہی خاصیت پیاز میں بھی پائی جاتی ہے۔ طبی تحقیق کے مطابق ان بالوں کے گرنے کی روک تھام کے لئے موثر ہے۔ آپ اپنے تیل میں لہسن پیس کر ملا کر بھی فوائد حاصل کرسکتی ہیں۔

2۔ کیل مہاسوں سے نجات کے لئے بھی لہسن ایک قدرتی علاج ہے۔ لہسن میں اینٹی آکسیڈنٹس بیکٹیریا کو ختم کرتے ہیں لہسن کو پوتھی کو کیل مہاسوں والی جگہ پر ہولے ہولے مسلنا موثر ثابت ہوتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  کولیسٹرول کو قابو رکھنے کیلئے درست غذاﺅں کا انتخاب

3۔ اگر کبھی جسم کے کسی حصے یا پاوں میں لکڑی کا کوئی ریشہ چبھ جائے تو لہسن کے ایک ٹکڑے کو متاثرہ جگہ کے اوپر رکھ کر اسے بینڈیج یاٹیپ سے کور کرلیں۔ اگر موزے پہننا چاہیں تو ضرور پہن لیں اور صبح بینڈیج ہٹا کے دیکھیں پھانس کے ساتھ ساتھ درد اور سوجن بھی ختم ہو جائیں گی۔

4۔مچھروں سے محفوظ رہنے کے لئے لہسن کے تیل میں پیٹرولیم جیلی اور موم کی تھوڑی سی مقدار لے کر سلوشن بنالیں اور شام سے رات تک یہ سلوشن تیار کر لیں۔

5۔ ہونٹوں پر زخم سے نجات کے لئے ان کو کچھ دیر کے لئے متاثر جگہ پر لگائے رکھیں۔ اس میں شامل قدرتی ورم کش خصوصیات آرام دیں گی۔
6۔لہسن قدرتی گلیو بھی ہے۔ لہسن کاٹتے اور چھیلتے وقت انگلیاں چپکنے لگتی ہیں تو آپ نے بار ہامحسوس کیا ہوگا۔ اس خوبی کو گھر گرہستی میں استعمال کر کے دیکھئے۔ اگر کسی شیشے کے برتن میں معمولی سا کر یک آگیا ہوتو لہسن پیس کر باریک کر لیں اور اس کے عرق کو کر یک پررگڑ لیں بعدازاں اوپر بنچ کے حصے کو صاف کردیں۔
7۔ لہسن پودوں کو تحفظ فراہم کرتا ہے۔ ان پودوں کے قریب آنے والے کیڑے مکوڑے لہسن کی بو کو پسند نہیں کرتے۔ آپ اپنے پودوں کو ان حشرات سے محفوظ رکھنا چاہیں تو لہسن، منرل آئل، پانی اور لیکوئیڈ صابن کو ایک اسپرے بوتل میں آپس میں ملا لیں اور پودوں پر چھڑک دیں۔
8۔ لہسن خارش سے آرام دیتا ہے چونکہ یہ سوجن کش اجزاءسے بھر پور ہے۔ اس لئے کہ اچانک ہونے والی خارش سے افاقہ بھی دے سکتا ہے۔لہسن کے تیل کی کچھ مقدار کو متاثرہ جگہ پرلگانے سے خارش ختم ہو جاتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  پھلوں کے بادشاہ :آم کے فوائد