pakvsnz_test

ٹی ٹونٹی سیریز کے بعد پہلے ٹیسٹ میں بھی پاکستانی ٹیم کو شکست

EjazNews

نیوزی لینڈ کی ٹیم نے جیت کیلئے373 رنز کا ہدف دیا تھا۔ پانچویں روز پاکستان نے تین وکٹ کے نقصان پر71 رنز سے اننگز آگے بڑھائی۔
آخری روز کے دوسرے ہی اوور میں اظہر علی 38 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔ 4 وکٹیں گرنے کے بعد فواد عالم اور محمد رضوان نے ٹیم کو سہارا دیا اور اسکور آگے بڑھایا۔

فواد عالم نے نیوزی لینڈ کے خلاف ذمہ دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے کیویز کے خلاف پہلے ٹیسٹ میچ میں کیرئیر کی سنچری بنائی۔
373 رنز کے ہدف کے تعاقب میں پاکستانی اوپنرز کا آغاز مایوس کن رہا۔ بغیر کھاتے کھولے ہی پاکستان کی دو وکٹیں گر گئیں۔

پاکستان کی جانب سے اوپنر شان مسعود اور عابد علی صفر پر آوٹ ہوئے اور حارث سہیل بھی9رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے تھے جس سے نیوزی لینڈ کی پوزیشن مضبوط ہوگئی۔
نیوزی لینڈ نے اپنی پہلی اننگز میں431 رنز بنائے تھے اور پاکستان نے299 رنز بنائے۔ پاکستان کے خلاف پہلے ٹیسٹ میں نیوزی لینڈ نے پانچ وکٹوں پر180 رنز بنا کر دوسری اننگز ڈکلیئر کی۔

یہ بھی پڑھیں:  ہرارے ٹیسٹ، اظہرعلی اور عابد علی کی شاندار بلے بازی
fawad alam
فواد عالم نے نیوزی لینڈ کے خلاف ذمہ دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے کیویز کے خلاف پہلے ٹیسٹ میچ میں کیرئیر کی سنچری بنائی۔

نیوزی لینڈ کے اوپنر ٹام لیتھم نے ایک سو بارہ گیندوں پر 53 رنز بنائے۔ کیوی اوپنر ٹام بلنڈل نے ایک سو سات گیندوں پر 64 رنز کی اننگز کھیلی۔

فواد اور رضوان نے پانچویں وکٹ کے لیے 165 رنز کی شراکت قائم کر کے میچ کو دلچسپ بنانے کی پوری کوشش کی۔ لیکن اس شراکت کا خاتمہ اس وقت ہوا جب 60 رنز بنانے والے رضوان کو وکٹوں کے سامنے پی لانے کی پاداش میں آوٹ قررا دیا گیا، رضوان کو فیلڈ امپائر نے ناٹ آﺅٹ قرارا دیا جس پر نیوزی لینڈ نے ریویو لینے کا فیصلہ کیا جو ان کیلئے سود مند ثابت ہوا۔

تاہم پاکستان کو اصل دھچکا اس وقت لگا جب فریکچر پیر کے ساتھ باولنگ کرنے والے کیوی فاسٹ باولر نیل ویگنر نے فواد عالم کی اننگز کا خاتمہ کردیا، بائیں ہاتھ کے بلے باز نے 269 گیندوں پر 102 رنز بنانے کے بعد پویلین لوٹے۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستان سپر لیگ کے بقیہ میچز ابو ظہبی میں ہوں گے

یاسر شاہ کا وکٹ پر قیام بھی مختصر رہا جس کے بعد پاکستان کی تمام تر امیدیں پہلی اننگز کے ہیرو فہیم اشرف سے وابستہ تھیں لیکن وہ بھی 19 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔محمد عباس اور شاہین شاہ آفریدی نے مزید 4 اوورز تک بیٹنگ کر کے شکست کو ٹالنے کی کوشش کی جس کے بعد پاکستان کی آخری بیٹنگ جوڑی کو ڈرا کے لیے مزید 10اوورز بیٹنگ کرنی تھی۔

نسیم شاہ اور شاہین شاہ آفریدی نے چھ اوورز تک سنبھل کر بیٹنگ کی جس کے بعد پریشانی سے دوچار کین ولیمسن باو¿لنگ کے لیے عباس کو آوٹ کرنے والے مچل سینٹنر کو لے کر آئے اور ان کا یہ فیصلہ بالکل درست ثابت ہوا۔نسیم شاہ اس گیند کو کھیلنے کے حوالے سے شش و پنج میں نظر آئے اور اسی کشمکش میں سینٹرنر کی گیند پر انہی کو کیچ دے بیٹھے۔

پاکستان کی پوری ٹیم میچ کے اختتام سے چار اوورز قبل 271 رنز بنا کر آوٹ ہو گئی اور نیوزی لینڈ نے میچ میں 101 رنز سے فتح حاصل کر کے سیریز میں بھی 0-1 کی برتری حاصل کر لی۔

یہ بھی پڑھیں:  افغانستان کے پاور ہٹرز اور اسپنرز نے اسکاٹ لینڈ کو 130 رنز سے ریکارڈ شکست دے دی

نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن کو پہلی اننگز میں عمدہ سنچری اور بہترین انداز اقیادت پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔
دونوں ٹیموں کے درمیان سیریز کا دوسرا ٹیسٹ میچ 3 جنوری سے کرائسٹ چرچ میں کھیلا جائے گا۔