The Green Dragon Inn

دنیا کے چند منفرد ہوٹل

EjazNews

پاکستان سے باہر کے چند خوبصورت اور انوکھے اور حیران کر دینے والے ریستورانوں کا ذکر کرتے ہیں جہاں ہم گئے ہیں مگر انٹرنیٹ پر فراہم کی جانے والی معلومات سے یہ اندازہ لگا سکتے ہیں کہ واقعی دنیا ایک طلسم کدہ ہے اور انسانی ذہانت اور ہنرکاری کی مہارت کس کس طرح صارفین کواعتماد میں لے لیا کرتی ہے۔
سنا تو یہ ہے کہ جو ہوٹل اور ریستوران بہت زیادہ آرائش و زیبائش یا تخیل کے عجوبوں کو یکجا کرتے ہیں ان کے کھانے نہایت ذائقے دار ہوں یہ ضروری نہیں مگر صاحب اندرون خانہ بیرونی جگہوں کی آراستگی اورکچن کی مصروفیات دونوں مختلف شعبے ہوتے ہیں ان کے سربراہان اور عملے کے افراد بہترین قائدانہ صلاحیتوں کے بل پر ہر ہر شعبے میں اعلی ٰ ذوق اور مہارت کا ثبوت پیش کر سکتے ہیں۔ بہرحال ذیل میں چند انوکھے ریستورانوں کا احوال پیش خدمت ہے ۔کبھی زندگی میں ممکن ہے کہ آپ بھی ان مقامات کی سیرکو جائیں تو ان جگہوں پڑبھی جائیں اور محسوس کریں کہ انسان میں کس طرح ورطہ حیرت میں ڈال سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  دنیا میں پائے جانے والے چند مقدس پہاڑ

The Green Dragon Inn
نیوزی لینڈ کے علاتے مماتا میں ہی ریستوران ایک پرکشش جھیل کے سامنے واقع ہے۔ تعمیراتی حسن اور علاقے میں موجود ہریالی کا ایساسنگم بہت کم ہی دیکھنے میں آتا ہے۔ ریستوران کے قرب و جوار میں دیہاتی پس منظر بھی خاصا دلفریب ہے اور عمارت کا ڈھانچہ ایسا پرکشش ہے کہ جسے دیکھتے ہی بنتا ہے۔

EL Diablo
سپینجائیں تو یہاں ضرور جائیں اور دیکھیں کہ لوگ تمن نایانیشنل پارک میں قائم اس ریستوران میں بے خوف ہو کر کھانا تناول کر لیتے ہیں کیونکہ یہ ریستوران آتش فشاں پہاڑوں کے قریب ہے۔ جو سیاح یہاں آتے ہیں ان کی آراءکے مطابق اس ریستوران کا باربی کیولا جواب ہے۔ یہی اس کی شہرت کا باعث ہے۔ ریستوران کے قریب ایک پہاڑ ہے جسے آگ کا پہاڑ کہا جاتا ہے۔ 1970 میں اس ریستوران نے اپنی خدمات شروع کی تھیں اور سیاحوں اور ریستوران کی انتظامیہ اور اس کی عمارت پر اللہ تبارک تعالی کا فضل ہی رہا ہے۔ کامیاب تجارت اور کھانوں کے شائقین کی دلچسپی کو دیکھتے ہوئے کہا جاتا ہے کہ یہاں آنے والے سیاحوں کا ریلہ کبھی تھمنے والا نہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  جیف بیزوس کی سابقہ اہلیہ کتنا چندہ دینے جارہی ہیں؟،آپ کی سوچ سے بھی زائد

Restaurant Le 3842
یہ ریستوران فرانس میں ایک پہاڑ جسے اگیولی دی میری کہا جاتا ہے۔ اس پربنایا گیا ہے۔ یورپ اور مشرقی وسطیٰ میں سڑکوں کے ناموں اورہندسوں کی شکل میں ریستورانوں کے نام رکھے جاتے ہیں۔ یہ ریستوران چونکہ سمندر سے 3842 میٹر کی بلندی پر ہے اس لئے اس کا نام بھی 3842رکھا گیا ہے۔
اس تک پہنچنے کے لئے حکومت نے چیر لفٹ کی سہولت مہیا کی ہے۔ فرانس آنے والے سیاح ایک بار تو ضرور یہاں آتے ہیں خواہ وہ ویڈیو ریکارڈنگز یا تصاویر بنانے ہی آئیں۔ کہا جاتا ہے کہ یہاں اسٹیک بہت ذائقہ دار بنتی ہے۔