federal_cabenat_imran_khan

وفاقی کابینہ 13نکاتی ایجنڈے میں متعدد کی منظوری

EjazNews

وفاقی کابینہ کے اجلاس میں 13نکاتی ایجنڈے کو رکھا گیا تھا اور ایجنڈے میں شامل متعدد نکات کی منظوری بھی دی گئی ۔
کابینہ اجلاس میں یوم استحصال کشمیر کی تیاریوں پر بھی کابینہ کو بریفنگ دی گئی اور اس کو منانے کے فیصلے کی توثیق بھی کر دی ۔
وزیراعظم عمران نے کہا کہ آرٹیکل 370 ختم کرکے بھارت نے مقبوضہ کشمیر کو کھلی جیل میں بدل دیا ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں 8لاکھ بھارتی فوجی تعینات ہیں ، ایک سال میں مقبوضہ کشمیر کی معیشت کو تباہ کردیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت آر ایس ایس کےانتہا پسندانہ نظریات کے کنٹرول میں ہے، پاکستان نے بھارت کے ساتھ تنازعات کے پر امن حل کی کوششیں کیں لیکن بے سود رہیں۔
اس موقع پر کابینہ اراکین نےکہا کہ بھارت نے غیر قانونی طور پر مقبوضہ کشمیر کی آئینی حیثیت تبدیل کی عالمی برداری کو نوٹس لینا چاہیے، کشمیریوں کی سیاسی ، سفارتی اور اخلاقی حمایت جاری رکھیں گے۔

یہ بھی پڑھیں:  بنگالی ٹائیگرز کی دھواں دار بائولنگ ، افغانستان 62رنز سے ہار گیا

کابینہ اجلاس میں ڈپٹی گورنر اسٹیٹ بینک کی تعیناتی کی بھی منظوری دی گئی ہے۔
وزیراعظم کی زیرصدارت کابینہ اجلاس میں نیشنل انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کی کارکردگی سمیت گیس کی تقسیم کے منصوبوں کی منظوری دی گئی۔
اجلاس میں ادارہ جاتی اصلاحات سے متعلق پیشرفت رپورٹ کابینہ میں پیش کی گئی۔
کابینہ اجلاس میں وزارت آئی ٹی کےماتحت یوایس ایف کمپنی کےسی ای اوکی تعیناتی کی بھی منظوری دی گئی۔ کابینہ کو میڈیا ہاؤسز کے واجبات کی ادائیگیوں پر بھی بریفنگ دی گئی۔

کابینہ اجلاس میں گیس کی تقسیم کے منصوبوں اور اقتصادی ترقی اور معاشی اعشاریوں پر بھی بریفنگ دی گئی۔
وزیراعظم کی زیرصدارت کابینہ اجلاس میں کورنگی فشریز ہاربر اتھارٹی کے بورڈ کی تشکیل نو کی منظوری بھی دی گئی۔
کابینہ اجلاس مسلسل ہو رہے ہیں جس میں بہت سے فیصلے ہورہے ہیں اور ان فیصلوں کے دوررس نتائج بھی آئیں گے کیونکہ بہت سے معاملات صرف اس لیے حل نہیں ہو پاتے کہ فیصلہ کرنے والی قوتیں فیصلہ ہی نہیں کرتیں۔

یہ بھی پڑھیں:  بابا گرونانک دیو جی کی برسی، سکھ یاتریوں کیلئے کرتار پور کھل گیا