گڑ کے فوائد

گڑ کے فوائد

EjazNews

گُڑ کو انگریزی میںJaggery اور فارسی میں قند سیاہ کہتے ہیں۔چونکہ اس کا مزاج دوسرے درجے میں گرم اور تر ہے، اس لیے اس کا استعمال سردی کا اثر زائل کرتا ہے۔ گُڑ کا صرف مٹھاس بھرا ذائقہ ہی نہیں، بلکہ یہ بے شمار فوائد کا بھی حامل ہے۔ مگر فی زمانہ، شہروں کی بات تو چھوڑئیے، دیہات وغیرہ میں بھی گڑ اور شکر کے بجائے سفید چینی استعمال کی جارہی ہے۔ حالانکہ مختلف تحقیقات کے بعد چینی کو’’میٹھا زہر‘‘قراردے دیا گیا ہے۔

گُڑ نظامِ ہضم کی اصلاح کرتا ہے۔ اس کے برعکس سفید چینی کے استعمال سے نظامِ ہضم کے امراض، بالخصوص قبض کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔اصل میں چینی میں مٹھاس کے علاوہ کسی بھی قسم کے وٹامنز، فائبرز اور نمکیات وغیرہ نہیں پائے جاتے، کیوں کہ چینی بنانے کے عمل میں یہ تمام غذائی اجزاء ضایع ہوجاتے ہیں۔ حالاں کہ گُڑ بنانے کے عمل کے دوران بھی بعض اجزاء ضائع ہو جاتے ہیں، اس کے باوجود اس میں پروٹین، حیاتین اور نمکیات سمیت کئی ایسے اجزاء باقی رہتے ہیں، جو انسانی صحت کے لیے مفید ہیں۔گُڑ کو اگرخشک، ٹھنڈی جگہ میں ہوا بند جار میں محفوظ رکھا جائے، تو عموماً ایک سال تک قابلِ استعمال رہتا ہے۔ گڑ کا استعمال قوت مدافعت مضبوط کرتا ہے۔ اطباء کئی امراض کے علاج کے لیے پُرانا گُڑ تجویز کرتے ہیں کہ یہ جس قدر پُرانا ہوتا ہے، اس کی افادیت بھی بڑھ جاتی ہے۔ پُرانا گُڑ، دائمی قبض، کھانسی اور دَمے کے لیے مؤثر دوا ہے۔اگر کھانے کے بعد تھوڑا سا گُڑ استعمال کرلیا جائے، تو نظامِ انہضام درست رہتا ہے۔ اطباء عموماً معجون کو گُڑ کے شیرے میں تیار کرتے ہیں کہ اس طرح ادویہ کی افادیت مزید بڑھ جاتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  کیمیاوی سپرے کی بجائے گھریلو ٹوٹکے اپنائیں ،صحت اور جیب دونوں کی حفاظت کریں

گُڑ کا استعمال اعصابی نظام کو طاقت بخشتا اور بیماریوں سے محفوظ رکھتا ہے۔ عام طور پر کپڑے کی ملوں اور کپاس کی فیکٹریوں میں کام کرنے والے اپنا کام ختم کرنے کے بعد روزانہ معمولی سا گُڑ استعمال کرتے ہیں، کیوں کہ گُڑ معدے کے اندر داخل ہو کر روئی کے ذرّات اور مضرصحت کیمیکل اجزاء خارج کردیتا ہے۔ علاوہ ازیں، جسم سے فاسد مادّوں کا اخراج کرتا ہے، تو تھکن دُور کرنے میں بھی اس کا کوئی ثانی نہیں۔ گُڑ کا استعمال دردِشقیقہ کے مریضوں کے لیے اہم گردانا جاتا ہے کہ اس میں ایسے اجزاء مثلاً آئرن، میگنیشیم، پوٹاشیم، کیلشیم، زنک وغیرہ پائے جاتے ہیں، جن کا استعمال درد سے نجات دلاتا ہے۔