sandel

صندل کے فوائد

EjazNews

صندل
جنوبی ایشیاءمیں پایا جانے والا یہ خوشبو دار درخت اپنے اندر وسیع تر فوائد رکھتا ہے۔ اس درخت کی اونچائی 33 فٹ تک ہوسکتی ہے۔ اسے مکمل طور پر بڑھنے کے لئے تیس سے ساٹھ برس درکار ہوتے ہیں جب کہ اس کی لکڑی کی مہک پر فیومز، صابنوں اور دیگر کاسمیٹکس میں استعمال کی جاتی ہے۔ صندل کے تیل کے فوائد بہت کم لوگ جانتے ہیں۔

ذہنی بے چینی اور اضطراب میں کمی:
صندل کی لکڑی کو صدیوں سے مختلف مذاہب کی خصوصی تقاریب میں جلایا جاتا رہا ہے اور مانا جاتا ہے کہ اس کے نتیجے میں ذہنی سکون ملتا ہے۔ ڈپریشن اور ذہنی بے چینی دور ہوتی ہے۔ تاہم اس حوالے سے ایک طبی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ صندل کا تیل سونگھنا اور سر پر مالش کرنے سے ذہنی صحت بہتر ہونے لگتی ہے۔

نیند میں مددگار:
جن لوگوں کو نیند نہیں آتی وہ صندل کے تیل کا استعمال کریں تو اعصاب پرسکون ہونے کی وجہ سے نیند کا مسئلہ حل ہو جاتا ہے۔ اگر آپ سر پرمالش نہیں کر سکتے تو اپنے سرہانے اس کی مہک کو رکھیں اور تیل سونگھنے سے بھی نیند کا مسئلہ حل ہو جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:  دانتوں کے امراض

ذہنی چوکنا پن بڑھائے:
ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ صندل کے تیل کی مہک کو سونگھنے سے ذہن بیدار رہتا ہے۔ اعصابی نظام کے ساتھ ساتھ دل کی دھڑکن کی رفتارتوازن میں رہتی ہے۔

کیل مہاسوں کا علاج:
کچھ عرصہ قبل ہی ایک تحقیق سامنے آئی تھی کہ صندل کے تیل کے جلدی استعمال سے چہرے کے دانے اور کیل مہاسے جاتے رہتے ہیں ۔اصل میں اس تیل میں موجود Salicylic Acid کامکسچر آٹھ ہفتوں میں کیل مہاسے ختم کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ تاہم ماہر جلد کے مشورے سے اس کا استعمال کیا جائے تو بہتر ہے۔

ورم دور کرے:
اس تیل میں موجود اجزاءورم کش ہوتے ہیں اور جلد پر لگانے سے ورم دور ہوتا ہے اور اس کے کوئی مضر اثرات بھی نہیں ہیں۔

یادداشت بہتر کرے:
ارتکاز توجہ بہت اہم مسئلہ ہے۔ بھولنے کی بیماری کا قدرتی علاج کرنا مقصود ہو تو صندل کے تیل سے بہتر کوئی اور چیز نہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  گرین ٹی کے فوائد

جسمانی بو سے نجات:
بیشتر افرادصندل کے تیل کو ڈیوڈرنٹ کے طور پر استعمال کرتے ہیں جس سے جسمانی بو کے مسئلے پر قابو پانے میں مدد ملتی ہے۔