psl_5_final

پی ایس ایل فائنل :کراچی کنگز نے میدان مار لیا

EjazNews

پی ایس ایل کے فائنل کیلئے ٹاس جیت کر لاہور قلندرز نے پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔لاہور قلندرز نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔
لاہور قلندرز کی طرف سے فخر زمان اورتمیم اقبال اوپننگ کر رہے ہیں

psl_tos
پی ایس ایل ٹیموں کا سکواڈ

کراچی کے نیشنل سٹیڈیم میں لاہور قلندرز اور کراچی کنگز کے درمیان پی ایس ایل فائیو کے فائنل ٹاکرے کے لیے میدان سج چکا ہے۔

پی ایس ایل کے فائنل میچ کیلئے دونوں ٹیموں کا جوش دیدنی ہے اور ٹی وی سکرین کے سامنے بیٹھے شائقین اور موبائل پر مختلف ویب سائٹس پر میچ دیکھنے والے اپنی اپنی جگہ جوش و جذبہ کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔

اب ٹرافی کی اس دوڑ میں رانا فواد ٹرافی لے کر لاہور آتے ہیں یا پھر سلمان اقبال اسے کراچی والوں کو خوشی دیتے ہیں یہ میچ کی صورتحال ہی بتائے گی۔

لاہور قلندرز کی پہلی وکٹ تمیم اقبال کی 35سکور پر گری ، تمیم کوافتخار احمد گیند پر عمید آصف نے کیچ آئوٹ کیا۔ لاہور کی دوسری وکٹ27سکور بنا کر گری یہ بھی کیچ آئوٹ ہوئے اس کے بعد تیسرے آئوٹ ہونے والےمحمد حفیظ تھے جو صرف 2سکور بنا پائےاور یہ بھی بابر اعظم کا شکار بنے۔ 72سکور پر لاہور قلندرز کی 3وکٹیں گر چکی تھیں۔ چوتھے آئوٹ ہونے والے کھلاڑی سمت پٹیل تھے جو صرف 4رنز بنا کر آئوٹ ہوئے۔ بین ڈنک 11 رنز بنا کر آوٹ ہوئے تو لاہور قلندرز نے 97 رنز بنا لیے تھے۔لاہور قلندرز کے کپتان سہیل اختر بھی بڑی اننگز کھیلنے میں ناکام رہے اور 14رنز بنا کر آﺅٹ ہو گئے اس وقت ٹیم کا مجموعی سکور 110تھا۔لاہور قلندرز کے آخری آو¿ٹ ہونے والے پلیئر محمد فیضان تھے جو 118 کے اسکور پر کوئی رن بنائے بغیر پویلین لوٹ گئے۔ڈیوڈ ویزے اور شاہین شاہ آفریدی نے آخری اوور میں 15 رنز سمیٹے۔ لاہور قلندرز نے مقررہ اوورز میں 7 وکٹوں پر 134 رنز بنائے۔

کراچی کنگز کی جانب سے ارشد اقبال، عمید آصف اور وقاص مقصود نے 2،2 وکٹیں حاصل کیں۔
ایک آسان ہدف کے تعاقب میں کراچی کنگز کی پہلی وکٹ 23 رنز پر گری جب شرجیل خان 11 رنز بنا کر سمت پٹیل کی گیند پر فخر زمان کو کیچ دے بیٹھے۔دلبر حسین نے کراچی کنگز کی دوسری اور اہم وکٹ 49 کے اسکور پر حاصل کی، الیکس ہیلز 11 رنز بنا سکے۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستان کی زمبابوے کیخلاف پہلی جیت

قومی ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے ٹیم کو جیت کی پوزیشن پر لا کھڑا کیا اور اپنی نصف سنچری بھی مکمل کی۔دلبر حسین نے والٹن کو 110 کے اسکور پر آو¿ٹ کیا، انہوں نے 27 گیندوں پر 22 رنز بنائے۔حارث روف 17ویں اوور میں یکے بعد دیگرے دو وکٹیں حاصل کرکے ہیٹ ٹرک کے قریب پہنچے لیکن عماد وسیم نے انہیں ناکام بنایا۔کراچی کنگز آخری اوور میں 5 کٹوں پر 135 رنز بنا کر 5 وکٹوں سے کامیاب ہوئی اور پہلی مرتبہ چمپیئن بننے کا اعزاز حاصل کیا۔بابر اعظم نے ناقابل شکست 63 اور عماد وسیم نے 10 رنز بنائے۔

لاہور قلندرز کے دلبر حسین اور حارث روف نے 2،2 وکٹیں حاصل کیں۔
بابراعظم کو شان دار کار کردگی پر پی ایس ایل کے فائنل اور سیریز کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔