home plant

رنگارنگ گلدان دعوت کی بڑھائیں شان

EjazNews

درخشاں فاروقی
سردیوں کے خوشگوار موسم میں شادیاں اور دیگر تقریبات خوب رنگ جماتی ہیں۔ موڈ اور موسم جب دونوں ہی خوشگوار ہوں تودل چاہتا ہے کہ خاندان اور دوست احباب سے ملاقات کا اہتمام کریں۔ خوش ذائقہ کھانے بنائیں، ماحول کو آراستہ کریں اور کچھ وقت خوش دلی سے گزار دیں۔ یہی ہوتا ہے کوالٹی ٹائم کہ جب دور اور قریب کے رہنے والے ایک چھت تلے اکٹھے ہوتے ہیں خوش گپیاں کرتے ہیں، مسئلے مسائل شیئر کرتے ہیں۔ خوش رہنے اور خوش کرنے کی کوشش میں محنت کرنے کا بڑا لطف آتا ہے کیا آپ جانتے ہیں کہ خوش رہنے والے افراد پر امید اور مثبت سوچ رکھنے والے زیادہ آمدنی حاصل کرتے ہیں۔ وہ اپنے ہدف زیاده آسانی سے حاصل کر لیتے ہیں اور ان لوگوں میں ذہنی تناو بھی کم پایا جاتا ہے۔ یہی لوگ پرسکون رہتے ہیں اور چاق و چوبند بھی کہ جو اپنے ماحول اپنے آس پاس کے لوگوں اور رشتوں سے قربتیں بڑھاتے ہیں۔ دعوت ایک ایسایی موقع ہوتا ہے جب آپ اپنے بہترین وسائل یکجا کر کے کسی کی خاطر مدارات کرتے ہیں اور کسی کو عزت و تکریم دیتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  آئیے خوبصورت موم بتیاں بنا کر گھر سجاتے ہیں

یوں بھی آپ اپنے گھر میں صفائی ستھرائی کے بعد آرائش خانہ کو خاص اہمیت دیا کرتی ہیں۔ ایسا بھی نہیں کہ آپ گھر کو فرنیچر اور بھاری بھرکم چیزوں سے بھر دیں یا گھر اورعجائب گھر میں کوئی امتیازی نہ کیا جا سکے۔
گھر کی خوبصورت کا پہلا تاثر راہداری سے اخذ ہوتا ہے۔ گیٹ کی صفائی، درو دیوار کا رنگ و روغن، تازہ پھولوں یاپھلوں کے گملے بید کا جھولا یا گھر میں لان ہوتو سبزے کی کٹائی اور گارڈن میں فرنیچر رکھا ہو گو کہ ان میں سے کئی اشیاء ہر گھرانے کی دسترس میں نہیں ہوسکتیں۔ یہ آپ کی صوابدید پر ہے کہ آپ گھر کی دہلیز اور راہداری کو کتنا صاف و شفاف اور بارونق بناتی ہیں۔ ذہانت اسی میں ہے کہ گھر کی جاذبیت کو بڑھاتے ہوئے سمجھوتے کم سے کم کئے جائیں ۔ بعض گھروں کی راہداری میں بڑی وسعت ہوتی ہے یہاں آپ جگہ کا بہتر استعمال کرتے ہوئے درخت کے تنے کے اسٹائل کی نیچے رکھ سکتی ہیں۔ فرش پر سرامکس کے قد آورPots کی گنجائش بھی نکل سکتی ہے یانہیں؟ دیکھ لیئے داخلی راستے پر بڑا گلدان رکھا جاسکتا ہے یا نہیں ۔ وکٹورین اسٹائل کی آرائش میں یہ سجاوٹ عام ہے۔ اصل میں فرشی گلدان نظر انداز ہونے والے کونوں کو Focal Point میں تبدیل کر دیا کرتے ہیں اور یہ انداز اپنی نوعیت کا شاندار طریقہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  ونڈ چائم گھر کی خوبصورتی میں نفیس اضافہ

گلدانوں کی تقسیم

گھر کا کوئی بھی کمرہ ہو، اس میں کیسا ہی رنگ وروغن ہو۔ یہ فرشی ہوں یا چھوٹی جسامت کے، ہر جگہ جچ  حاتے ہیں اور جمالیاتی کشش و جازبیت میں اضافہ کرتے ہیں۔ آج کل دودھیا، رنگین، دانے دار سفید، سیاہ اور مٹیالے رنگوں میں بھی گل دان دستیاب ہیں۔

آپ کے کمروں کی Theme کیا ہے؟

کیا آپ کے ٹی وی لاونج میں ان کی زیادہ تعداد بھلی لگے گی یا ایک کمرے میں چارمختلف ساخت کے گلدان رکھنا کافی ہوں گے۔ مختلف طول وعرض اور شکل کے گلدان یکجا کر کے یا علیحدہ علیحدہ رکھے جاسکتے ہیں۔ آرائش ایک مشترکہ عنصر ہے جوتمام پھول دانوں کو ایک دوسرے سے منسلک کرتی ہے اور ٹی وی لاونج یا ڈرائنگ روم یا راہداری کوردهم عطا کرتی ہے۔ میز پر ہر گلدانوں کا رکھا جانا، ایک روایتی انداز آرائش ہے۔ Console  میز پر رکھنا ایک جوڑی یا تن تنہا ایک ہی گلدان رکھا جانا قدرے جدید آہنگ
کمرے کی کلر اسکیم
اگر آپ چاہتی ہیں کہ کمرے کی کلر اسکیم کومکمل کیا جائے یا رنگ میں اضافہ کیا جائے تو پھر فرش پھولدان بھی ضرور رکھے۔ آپ روشن اور بے شمارٹونز میں آنے والے فرشی گلدان کے ساتھ کمرے میں دلکشی پیدا کر سکتے ہیں۔ یہ بقیہ سجاوٹ کے ساتھ ہم آہنگ ہو جائیں گے۔ خیال رہے کہ گلدان کیسے ہی کیوں نہ ہوں انہیں تصنع آمیزی کا تاثر لئے نہیں ہونا چاہئے۔ بدلتے ہوئے رجحانات کو بھی مدنظر رکھ کر انہیں خریدنا چاہئے اور پھر مخصوص پس منظر برقرار رکھنے کے لئے آسان آرائش کے تصور پربھی کام کرنا درست ہوگا۔ کالے یا مٹیالے رنگ کے گلدان بھی فرش سے چونکہ متضاد رنگ کا ہوتا ہے دیکھنے میں بے حد خوشنما تاثر دے سکتا ہے۔ اسی متضاد اور ہم آہنگی کے تصور کے ساتھ نہایت جازبیت سے آرائش مکمل کی جاسکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  گردوغبار کے ننھے کیڑوں سے الرجی