islam_allaha-9

اللہ تعالیٰ کا دشمن

EjazNews

(سورۃ البقرۃ ۲)
۹۸۔جو ہے دشمن اللہ کا اور اس کے فرشتوں کا اور اس کے رسولوں کااور جبرائیل و میکائل کا تو بیشک اللہ بھی دشمن ہے کافروں کا۔

(سورۃ الانفال۸)
۶۰۔ اور تم سے جتنا ہو سکے ان کے (مقابلے کے ) لئے قوت اور گھوڑوں کی چھائونیاں تیارکرو، جن سے اللہ تعالیٰ کے دشمن اور اپنے دشمن اور ان کے علاوہ دوسروں پر ہیت طاری کرو۔ تم انہیں نہیں جانتے ، اللہ انہیں جانتا ہے اور جو کچھ بھی تم اللہ کی راہ میں خرچ کرو گے وہ تمہیں پورا دیا جائے گا اورتم پر ظلم نہ ہوگا۔

(سورۃ التوبہ ۹)
۱۱۴۔ اور ابراہیم کا اپنے باپ کے لئے بخشش کی دعا مانگنا صرف اس وعدہ کی وجہ سے تھا جو اس نے اس سے کر لیا تھا۔ پھر جب اس پر واضح ہو گیا کہ وہ اللہ تعالیٰ کا دشمن ہے تو وہ اس سے بے تعلق ہو گیا۔ ابراہیم بیشک نرم دل اور بردبار تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  حضرت فاطمۃ الزہرا رضی اللہ عنہا

(سورۃ ھود۱۱)
۵۹۔ اور یہ تھے عاد جنہوں نے اپنے رب کی نشانیوں کا انکار کیا اور اس کے رسولوں کی نافرمانی کی اور ہر جابر دشمن خدا کے حکم پر چل پڑے۔

(سورۃ حم السجدۃ ۴۱)
۱۹۔ اور جس دن اللہ تعالیٰ کے دشمن دوزخ کی طرف لائے جائیں گے اور ان (سب) کو جمع کر دیا جائے گا۔
۲۰۔ یہاں تک کہ جب بالکل جہنم کے پاس آجائیں گے ان پر ان کے کان اور ان کی آنکھیں اور ان کی کھالیں ان کے اعمال کی گواہی دیں گی۔
۲۱۔ یہ اپنی کھالوں سے کہیں گے کہ تم نے ہمارے خلاف شہادت کیوں دی، وہ جواب دیں گی کہ ہمیں اس اللہ تعالیٰ نے قوت گویائی عطا فرمائی جس نے ہر چیز کو بولنے کی طاقت بخشی ہے ، اس نے تمہیں اول مرتبہ پیدا کیا اور اسی کی طرف تم سب لوٹائے جائو گے۔
۲۸۔اللہ تعالیٰ کے دشمنوں کی سزا یہی دوزخ کی آگ ہے جس میں ان کا ہمیشگی کاگھر ہے (یہ ) بدلہ ہے ہماری آیتوں سے انکار کرنے کا۔

یہ بھی پڑھیں:  حلیم و بردباری

اللہ تعالیٰ کافی ہے

(سورۃ النساء۴)
۷۵۔ بھلا کیا وجہ ہے کہ تم اللہ کی راہ میں اور ان ناتواںمردوں، عورتوں اور ننھے ننھے بچوں کے چھٹکارے کے لئے جہاد نہ کرو ؟ جویوں دعائیں مانگ رہے ہیں کہ اے ہمارے پروردگار ان ظالموں کی بستی سے ہمیں نجات دے اور ہمارے لئے خود اپنے پاس سے حمایتی مقرر کر دے اور ہمارے لئے خاص اپنے پاس سے مدد گار بنا۔

(سورۃ الاحزاب ۳۳)
۲۵۔ اور اللہ تعالیٰ نے کافروں کو غصے میں بھرے ہوئے ہی (نامراد) لوٹا دیا انہوں نے کوئی فائدہ نہیں پایا اور اس جنگ میں اللہ تعالیٰ خود ہی مومنوں کو کافی ہو گیا اللہ تعالیٰ بڑی قوتوں والا اور غالب ہے۔

(سورۃ الزمر۳۹)
۳۶۔ اور جسے وہ ہدایت دے اسے کوئی گمراہ کرنے والا نہیں کیا اللہ تعالیٰ غالب اور بدلہ لینے والا نہیں ہے۔
۳۸۔ اگر آپ ان سے پوچھیں کہ آسمان اورزمین کو کس نے پیدا کیا ہے ؟ تو یقینا وہ یہی جواب دیں گے کہ اللہ نے۔ آپ ان سے کہیے کہ اچھا یہ تو بتائو جنہیں تم اللہ کے سوا پکارتے ہواگر اللہ تعالیٰ مجھے نقصان پہنچانا چاہے تو کیا یہ اس کے نقصان کو ہٹا سکتے ہیں ؟ یا اللہ تعالیٰ مجھ پر مہربانی کا ارادہ کرے تو کیا یہ اس کی مہربانی کو روک سکتے ہیں؟ کیا آپ کہہ دیں کہ اللہ مجھے کافی ہے، تو کل کرنے والے اسی پر توکل کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  اللہ تعالیٰ کی تدبیریں

(سورۃ الطلاق ۶۵)
۳۔ اور اسے ایسی جگہ سے روزی دیتا ہے جس کا اسے گمان بھی نہ ہو اور جو شخص اللہ پر توکل کرے گا اللہ اسے کافی ہوگا۔اللہ تعالیٰ اپنا کام پورا کر کے ہی رہے گا ۔ اللہ تعالیٰ نےہر چیز کا ایک اندازہ مقرر کر رکھا ہے۔