shibli faraz

روزویلٹ ہوٹل مکمل طور پر حکومت پاکستان کی ملکیت ہے:وزیراطلاعات

EjazNews

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں ملک کی موجودہ سیاسی، سکیورٹی صورتحال اور مہنگائی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔کابینہ اجلاس میں بجلی گیس وادویات کی بڑھتی قیمتوں پر بحث ہوئی اور متعدد وزرا نے مہنگائی پر اظہار تشویش کرتے ہوئے ہنگامی اقدامات لینے کا مطالبہ کیا۔وزیرمواصلات مراد سعید، وزیر ریلوے شیخ رشید اور فیصل واڈا سمیت دیگر نے اجلاس کے دوران مہنگائی کا معاملہ اٹھایا۔

کابینہ ارکان کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومتوں و ضلعی انتظامیہ کو اشیا کی دستیابی یقینی بنانا ہو گی۔
اس موقع پر وزیراعظم نے مہنگائی میں کمی کیلئے ہنگامی اقدامات کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ حکومت جلد ایکشن پلان پرعملدرآمد شروع کرے گی۔ان کا کہنا تھا کہ عام آدمی کو ریلیف دینے کے لیے سرکاری مشینری متحرک کریں گے۔ ہماری پوری توجہ مہنگائی کنٹرول کرنے پر ہو گی، ساری صورتحال مانیٹر کر رہا ہوں۔

یہ بھی پڑھیں:  ایک جج کا دل شیر کی طرح اور اعصاب فولاد کی طرح ہونے چاہئیں:چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ

اسلام آباد میں وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد پریس کانفرنس میں وزیراطلاعات شبلی فراز کا کہنا تھا حکومت نے تمام قرض ادا کردیا جس کے بعد اب روزویلٹ ہوٹل مکمل طور پر حکومت پاکستان کی ملکیت ہے۔ روز ویلٹ ہوٹل کے سٹاف کے تمام واجبات ادا کردئیے گئے ہیں۔

سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد سے کوئی پریشانی نہیں ہے لیکن اب جبکہ کووڈ 19 کے باوجود ملک میں معاشی سرگرمیاں بڑھ رہی ہیں اب اپوزیشن انتشار پیدا کرنے کے لیے جمع ہورہی ہے۔

سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ ان کا کوئی مستقبل نہیں ہے، عوام انہیں رد کرچکے ہیں، یہ تمام لوگ اپنی لوٹی ہوئی دولت کو بچانے کے لیے جمع ہوئے ہیں۔